14

فلسطینی طالبہ عربی ریڈنگ چیلنج جیت لیا

رام اللہ (سٹیٹ ویوز)متحدہ عرب امارات میں عرب دنیا کی سطح پرکتب کے مطالعے کے حوالے سے ہونے والے مقابلے میں ایک فلسطینی دوشیزہ کو مقابلے کی فاتح قرار دیا گیا ہے۔
Palestine girl 02


فلسطینی میڈیا رپورٹس کے مطابق عرب ریڈنگ چیلنج میں 25 عرب ممالک کے 74 لاکھ طلبا وطالبات نے حصہ لیا تھا۔ مقابلے میں عرب دنیا کے ممتاز اسکولوں میں بحران کے الایمان اسکول کو وطن عربی کا بہترین اسکول قرار دیا گیا ہے۔گذشتہ روز متحدہ عرب امارات کے شہر دبئی میں منعقدہ مقابلے کی آخری تقریب میں فلسطینی طالبہ عفاف راید شریف کو عرب ریڈنگ چیلنج کی ہیروئن قرار دیا گیا۔

آخری اور حتمی مقابلے میں 16 طلبا طالبات نے حصہ لیا، جب کی بہترین اسکول کے مقابلے میں چھ اسکول شامل تھے۔ تقریب میں متحدہ عرب امارات کے نائب صدر اور حاکم دبئی الشیخ محمد بن راشد آل مکتوم بھی موجود تھے۔ فیصلہ کن مقابلے میں الجزائر، بحرین، سلطنت اومان، فلسطین، موریتنانیہ، لبنان، کویت، اردن، سوڈان، تیونس، سعودی عرب ، مراکش اور متحدہ عرب امارات شامل تھے۔ان 16 طلبا و طالبات کا انتخاب مقابلے میں حصہ لینے والے 74 لاکھ طلبا طالبات اور 6 اسکولوں کا 41 اسکولوں میں چنا کیا گیا تھا۔

رواں سال ہونے والے مقابلے میں پچیس عرب ممالک کے 74 لاکھ طلبا طالبات نے حصہ لیا۔ اتنی کثیر تعداد کا مقابلے میں شامل ہونا اس پروگرام کی کامیابی کی دلیل ہے۔عرب ریڈنگ چیلنج اپنی نوعیت کا منفرد پروگرام ہے جس نے عرب دنیا کے طلبا طالبات کو مطالعے اور کتاب کے ساتھ منظم انداز میں اپنا تعلق قائم کرنے کا موقع فراہم کیا ہے۔

دوسری جانب فلسطینی وزیر تعلیم صبری صیدم نے عفاف الشریف کی کامیابی کو پوری فلسطینی قومکیلئے باعث اعزاز قرار دیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ فلسطین کی بیٹی نے ایک بار پھر یہ ثابت کیا ہے کہ فلسطینی قوم ہرمیدان میں آگے ہے۔ عفاف الشریف کی محنت فلسطین کی نئی نسل بالخصوص طلبا کے لیے بہترین نمونہ ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں