15

ماسکومیں کشمیریوں پربھارتی مظالم کی گونج

ماسکو(سید اشتیاق ہمدانی/سٹیٹ ویوز) روس میں پاکستانی سفارت خانےمیں نے27 اکتوبرکویوم سیاہ کی مناسبت سے احتجاجی ریفرنس کا انعقاد کیا ۔

تقریب کا آغاز تلاوت کلام پاک سے ہوا۔ شہنشاہ فہد مشتاق نے تلاوت کلام پاک کا شرف حاصل کیا۔ اس موقع پر پاکستانی سفارت خانے کے سکینڈ سیکرٹری مبشر خان اور تھرڈ سیکرٹری سید انصار حسین شاہ نے صدر پاکستان ممنون حسین اور وزیراعظم پاکستان شاہد خاقان عباسی کے پیغامات پڑھ کرسنائے.

اس موقع پر روسی شاعرہ لدمیلہ آگادیوہ نے کشمیر پر اپنی خوبصورت نظم بھی پیش کی۔ تقریب میں سٹیج سیکریٹری کے فرائض مبشر خان نے خوش اسلوبی سے سرانجام دئیے۔ احتجاجی ریفرینس سے خطاب کرتے ہوئے روس میں پاکستان کے سفیر قاضی محمد خلیل اللہ نے کہا کہ 27 اکتوبر 1947 کو انڈین افواج نے جموں و کشمیر کے علاقے پر غیر قانونی قبضہ کرلیا تھا جسکے خلاف غیور کشمیری قوم آج تک احتجاج کر رہی ہے ۔

اگرچہ انڈیا نے کئی دہائیوں سے کشمیری قوم کو حق خودارادیت سے محروم رکھا ہوا ہے لیکن انڈیا کی تمام جبرواستداد کے باوجود کشمیریوں نے اپنی تحریک کو جاری رکھا ہوا ہے۔ مسئلہ کشمیر ایک عالمی مسئلہ ہے جسکو اقوامِ متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراداد کی روشنی میں کشمیری عوام کی امنگوں کے مطابق حل کیا جانا چاہئے۔

انھوں نے پاکستان اور روس دونوں ممالک کے میڈیا کو کشمیر ایشو پر غیر جانبدارنہ کوریج کرنے پر زبردست خراج عقیدت پیش کرتے ھوئےکہا کہ دونوں ممالک کے میڈیا نے جس بہادری اور غیر جانبداری کے ساتھ کشمیر ایشو کو دنیا کے سامنے پیش کیا ھے ۔وہ قابل تعریف ہے ۔ انھوں نے پاک روس تعلقات میں پیش رفت کا بھی ذکر کیا۔

اس موقع پر حال ہی میں اقوام متحدہ کے سالانہ اجلاس میں پاکستان کے وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کے خطاب کی ویڈیو بھی دکھائی گئی جس میں وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے مقبوضہ کشمیر میں مظالم پر بھارت کو دو ٹوک جواب دیا. تقریب میں رشین میڈیا کے نمائندوں ، دانشوروں ، سول سوسائٹی اور پاکستانی کمیونٹی کی بڑی تعداد نے بھی شرکت کی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں