36

علی شاہنواز نےوزیراعظم آزادکشمیر کیلئےسوال چھوڑ دیئے

اوسلو(سٹاف رپورٹر/سٹیٹ ویوز) اوسلو میں مقیم کشمیریوں کے بین الاقوامی سفارتکارسردارعلی شاہنوازخان نےکہا کہ وزیراعظم آزادکشمیر راجہ فاروق حیدرکے آبائی حلقے میں مرکز صحت (میٹرنل سنٹر ) بند ہونے کے باعث خاتون نے سڑک پر بچے کو جنم دیا اور سردی کے باعث اس کی موت واقع ہو گئی۔یہ تشویش ناک معاملہ ہے۔

انکا کہنا ہے کہ اس واقعہ کے سٹیٹ ویوز میں رپورٹ ہونے کے بعد وزیر اعظم آزاد کشمیر نے نوٹس لے لیا تاہم سوال اٹھتا ہے کہ مرکزصحت کیوں بند تھا ؟ یہ پہلا واقعہ ہے جو رپورٹ ہوا تاہم آزاد کشمیر میں صحت کی سہولیات کا فقدان نظر آتا ہے۔ بالخصوص سیزفائر لائن کے قریب کے علاقوں میں صحت کی سہولیات نہ ہونے کے باعث بھارتی فوج کی فائرنگ سے زخمیوں کو ابتدائی طبی امداد کیلئے بھی کئی کلومیٹر کا سفر طے کرنا پڑتا ہے۔

انکا کہنا ہے کہ جیسے عباسپور میں کوئی زخمی ہو تو اسے راولاکوٹ لایا جاتا ہے ۔ حکومت ایک جانب اضلاع اور تحصیلوں میں اضافے کی بات کر رہی ہے جو خوش آئند ھےلیکن عوام کو بنیادی سہولیات مہیا کرنا فرض اولین ھونا چائیے۔

انتخابات سے قبل مہم کے دوران باغ میں ایک بڑے ہسپتال کی تعمیر کے وعدے کئے گئے تھے جن پر ابھی تک کوئی کام نہ کیاجا سکا۔ اسی طرح شاہرات کیلئے کئی دعوے سامنے آئے جنہیں عملدرامد تک صرف سیاسی اعلانات ہی سمجھاجائےگا۔

آزاد کشمیر میں جہاں صحت کی سہولیات کا فقدان ہے وہیں ڈاکٹروں کی جانب سے بھرپور غفلت بھی برتی جا رہی ہے ۔فاروق حیدر حکومت کا بچے کی سڑک پرپیدائش اور موت کے معاملےمیں نوٹس لینا خوش آئند ہے اب غفلت برتنے والوں کے خلاف سخت کاروائی ہونی چاہئیے اور حکومت کو چاہئیے کہ سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنانے کی کوشش کرے اور چیک اینڈ بینس کا منظم نظام بنایا جائے تاکہ آئندہ اس قسم کے واقعات وقوع پذیر نہ ہوں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں