Barrister sultan

24

بیرسٹر سلطان نے آئین میں ترامیم کا مطالبہ کردیا

اسلام آباد(سٹیٹ ویوز) آزاد کشمیر کے سابق وزیر اعظم و پی ٹی آئی کشمیر کے صدر بیرسٹر سلطان محمود چوہدری نے کہا ہے کہ آزاد کشمیر کے عوام کا ریاستی تشخص بحال کرانے کیلئے آئین میں ترامیم ضروری ہیں اور عوام کو زیادہ سے زیادہ اختیارات دینے سے ہی مسائل حل ہو سکتے ہیں

اسلام آباد میں اپنی رہائشگاہ پر بے نظیر بھٹو شہید کے سابق مشیر شیخ ارشد برکی سے ملاقات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا اسلام آباد میں بیٹھے لوگ یہاں کٹھ پتلی کا ناچ نچا کر کرپشن سے ملائی بھی نکال کر کھا جاتے ہیں اور عوام کو انکے حقوق بھی نہیں ملتے۔ لہذا اب آزاد کشمیر کے عوام کو اپنے حقوق کے لئے خود مہم جوئی کرنا ہو گی۔ اسکے لئے آئین میں ترامیم کرنے کی بھی ضرورت ہے ورنہ پاکستان کے مخالف نظریہ رکھنے والے اسے استعمال کر سکتے ہیں۔

انہوں نے کہا ہے کہ آزادی کے بیس کیمپ کو صحیح معنوں میں آزادی کا بیس کیمپ بنایا جائے کیونکہ اس بیس کیمپ کو ہمارے آباﺅ اجداد نے اپنے زور بازو سے آزاد کرایا تھا۔ اسلئے مجھے یقین ہے کہ آزاد کشمیر کے عوام اپنی تمام نظریاتی ، سیاسی اور سماجی وابستگیوں سے بالاتر ہو کر جہاں آزاد کشمیر کے عوام کو انکے حقوق دلوانے کے لئے آگے بڑھیں گے اسی طرح اگلے سال میری کال پر سیئز فائر لائن توڑنے کی بھی بھرپور حمایت کریں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں