14

ٹیکنالوجی کا استعمال طلباء کے لیے اچھا ہے یا برا؟

لاہور(سٹیٹ ویوز) ایجوکیشن نیکسٹ نامی تحقیقی جریدے میں شائع ہوئی ایک نئی تحقیق کے مطابق کمرہ جماعت میں کسی بھی قسم کے کمپیوٹر کے استعمال کی اجازت دینے سے طلباء کی امتحان میں کارکردگی نمایاں طور پر کم ہوتی ہے۔تو کیا ٹیکنالوجی کا استعمال برا ہے؟ ماہرین اس کا جواب نفی میں دیتے ہیں۔

ان کے مطابق ٹیکنالوجی کے اچھے یا برے ہونے کا انحصار اس کے استعمال پر ہوتا ہے۔ہارورڈ یونیورسٹی کے ایک پروفیسر ڈیوڈ کے مطابق تختہ سیاہ کی ایجاد انیسویں صدی کے شروع میں ہوئی تھی۔ تختہ سیاہ سے درس و تدریس کا عمل آسان ہو گیا تھا۔ اس سے پہلے کلاس میں موجود استاد ہر بچے کے پاس جا کر اسے سمجھاتا تھا۔تختہ سیاہ کے یہ فوائد دیکھ کر امریکہ کے دیگر سکولوں نے بھی اسے استعمال کیا لیکن انہیں ناکامی کا سامنا کرنا پڑا۔ استادوں کوتختہ سیاہ کے استعمال میں مشکلات پیش آرہی تھیں۔

تعلیمی پالیسی کی تبدیلی کے بعد ہی امریکہ تختہ سیاہ کے فوائد سے مستفید ہو سکا تھا۔ پروفیسر ڈیوڈ کا کہنا ہے کہ جدید ٹیکنالوجی بھی انسان کے سیکھنے کے عمل کو بہتر کر سکتی ہے اگر اس کا استعمال ٹھیک طریقے سے کیا جائے اور بہتر تعلیمی پالیسی بنائی جائے۔پروفیسر ڈیوڈ نے مزید یہ بھی کہا کہ کمرہ جماعت میں ہر طالب علم کو کمپیوٹر مہیا کرنے سے ان کی سیکھنے کی صلاحیت پر فرق پڑتا ہے لیکن کمپیوٹر سافٹ وئیر کے ذریعے تعلیم دینا طالب علموں کی سیکھنے کی استعداد میں اضافہ کرتا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں