STS Sindh Testing service

60

سندھ ٹیسٹنگ سروس کی شفافیت سوالیہ نشان بن گئی

کراچی (آصف خان/سٹیٹ ویوز) سرکاری نرسنگ اسکولوں میں داخلوں کےلیےسندھ ٹیسٹنگ سروس (ایس ٹی ایس) کےتحت ہونےوالےتحریری ٹیسٹ کے نتائج نہ ہونےکےبرابر.

آئی بی اے سکھر کے تحت ہونے والے ایس ٹی ایس ٹیسٹ میں ہزاروں طالب علموں نے سرکاری نرسنگ اسکولوِں میں داخلوں کے لیے ٹیسٹ دیاتھا جس میں اکثریت میں طالب علم فیل ہوگئے تھے.

طلباء نے سٹیٹ ویوز کو بتایا ایک پلان کے تحت داخلے ٹیسٹ کومشکل بنایا گیا یہی وجہ تھی کہ اکثریت طالب علم داخلے ٹیسٹ میں فیل ہوگئے جس سے اس کی شفافیت پرشک و شہبات جنم لے رہے اور بھاری رشوت لیکر داخلے دیے جانے کی تیاری کی جاری یے جس سے میرٹ کا کھلےعام قتل ہوگااورکرپشن کی راہ ہموارکی جاری ہے یہی وجہ ہےکہ ہر اسکول سےدس سے پندرہ طالب علم پاس ہوئے ہیں جو ٹیسٹ بنایا گیا تھا وہ گریجویشن کے لیول کا تھا.

طلباء نے سٹیٹ ویوز ڈیجیٹل میڈیا گروپ کے توسط سےمتعلقہ اداروں سےدرخواست کی ہے کہ فی الفور اس مسلئے پرنظر ثانی کی جائے تاکہ طالب علموں کا مستقبل تاریک نہ ہو اور میرٹ کا بول بالا ہو.