چیف انجینئربہاولپوروقاروڑائچ نےمحکمہ ایرگیشن کویرغمال بنالیا 

رپورٹ: اعجاز بٹ
بہاولپور:سٹیٹ ویوز
چیف انجینئربہاولپوروقار وڑائچ نے محکمہ ایرگیشن کو یرغمال بنا لیا ،تعمیراتی منصوبوں میں کروڑوں کےگھپلےبدعنوانیوں کےانکشافات کے باوجوداعلیٰ حکام نے چُپ سادھ لی.

تفصیلات کے مطابق 6آراور7آر کینال کا کام جوکہ تقریباََ 92کروڑ روپے میں ٹینڈر العرب کنسٹرکشن کمپنی کے نام منظور ہوا اور سب سے پہلے ہاکڑا ڈویژن کے افسران اور ایس ای سے ملی بھگت کر کے تمام پراجیکٹ کے ٹی ایس ایسٹی میٹ منظور شدہ کے بعد کام شروع کروا دیا اسکے بعد ہاکڑا ڈویژن کے افسران جن میں ایگزیکٹو انجینئر عارف گجر ، ایس ڈی او محمد احمد، سب انجینئر محمود احمد ودیگر افسران کی ملی بھگت سے پہلے کام پر فوری طور پر ٹھیکیدار کو سیکیور ایڈوانس کی مد میں کروڑوں روپے کی ادائیگیاں کی گئیں اسکے بعد ٹھیکیدار کے ساتھ ملی بھگت کر کے کروڑوں روپے ٹی ایس ایسٹی میٹ کے کراس سیکشن چینج کر کے کروڑوں روپے کی ادائیگیاں کر دی گئیں لیکن ٹھیکیدار کے ساتھ حصے کی لڑائی کے بعد یہ معاملات باہر آنے لگے جس پر ایگزیکٹو انجینئر عارف گجر نے سب انجینئر شبیر کاہلوں کو ساتھ ملا کر فوری طور پر ایک چٹھی20/69 تاریخ2-12-2017 ایکسیئن ہاکڑا کینال ڈویژن نے اپنے آپ کو بچانے کی خاطر فوری طور پر چٹھی لکھ کر وعدہ معاف گواہ بننے کی کوشش کی.

اس فراڈ کے بارے میں لکھی جانے والی چٹھی جو کہ یہ ثابت کرتی ہے کہ ہاکڑا ڈویژن میں 6آر اور7آر کینال کی کراس سیکشن چینج کرکے کروڑوں روپے کی ادائیگیاں کی گئیں تھیں جناب عالیٰ یہ فراڈ سامنے آنے پر جس میں شامل لوگ یا تو میڈیکل دے رہے ہیں یا وہ وعدہ معاف گواہ بن رہے ہیں یہ کرپشن کی گھناؤنی واردات کی سرپرستی چیف انجینئر بہاولپور وقار وڑائچ کر رہے ہیں.

جب اس ضمن میں ایگزیکٹو انجینئرعارف گجر سے موقف جاننے کے لئے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے کہ وہ اس کرپشن میں ملوث نہیں البتہ انہوں نے سیکرٹری ایری گیشن کو کرپشن کے متعلق آگاہ کرنے کیلئے لیٹر لکھ دیا ہے اور بتایا کہ کمیٹی بنا دی گئی ہے جبکہ باوثوق ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ سیکرٹری ایری گیشن کو بھیجی جانے والی چھٹی محض اپنی جان چھڑانے کیلئے ہے تاکہ جب کوئی پوچھے تو اس کو بتادیا جائےکہ ہم نے تو سیکرٹری صاحب کو خط لکھ دیا تھا اور جو کمیٹی بنائی گئی ہے اس میں وہ لوگ شامل ہیں جو پہلے سے ہی کرڑوں روپے کی کرپشن میں ملوث پائے گئے ہیں.

کمیٹی میں جن لوگوں کے نام ہیں ان میں سے سب انجینئر شیخ شاہد اور ایس ڈی او تنویر خان جو رحیم یار خان میں کروڑوں روپے کے فنڈز کے گھپلوں میں ملوث رہے باوثوق ذرائع سےیہ بھی معلوم ہواہےکہ چیف انجینئربہاوپوروقاروڑائچ آجکل تین کروڑوں روپے کی بوگس آدائیگیاں کرنےکیلئےایگزیکٹوانجینئرعارف گجرپردباؤ ڈال رہےہیں چیف انجینئرسےموقف جاننے کیلئےجب رابطہ کیا گیا تو ان سے رابطہ نہیں ہوسکا.