پاکستانی امداد بند کرنے پرسابق امریکی سفیر رچرڈ اولسن ٹرمپ پر برہم

نیویارک(ویب ڈیسک) سابق امریکی سفیر رچرڈ اولسن نے کہا کہ امریکہ کا پاکستان کا سکیورٹی تعاون روکنا غلط اقدام ہے۔

انہوں نےنیویارک ٹائمز میں اپنے کالم میں لکھا کہ امریکہ اپنی ناکامی پاکستان پر نہ ڈالے ، پاکستان کے تعاون کے بغیر امریکی کی افغان جنگ میں کامیابی ناممکن ہے ۔

انہوں نےمزید کہا کہ اسلام آباد کی مدد کے بغیر افغانستان میں امریکی فوج ساحل پر پڑی وہیل کی طرح ہوگی۔ انہوں نے نیویارک ٹائمز میں لکھا ہے کہ پاکستان سے سیکیورٹی تعاون روکنا امریکہ کی جانب سے جذباتی اقدام ہے، معاونت روکنا درست نہیں۔ امریکہ کا اسلام آباد پر زور ختم ہو رہا ہے۔

رچرڈ اولسن کے مطابق پاکستان اب امریکی اثرورسوخ سے نکل چکا ہے ، جبکہ پاکستان اب مستحکم معاشی طاقت کے طور پر ابھر رہا ہے جس کی مثال خطے میں سی پیک جیسے منصوبے ہیں۔ انہوں نے لکھا کہ امریکہ کا اب دیگر ممالک کے ساتھ پاکستان پر بھی زور کم ہوتا جارہا ہے ۔پاکستان کےساتھ غیر رسمی اعلیٰ سطح رابطے کیے جائیں۔ٹویٹ اور پاکستان کی امداد بند کرنے سے امریکہ کامیابی حاصل نہیں کرسکتا۔

انہوں نے کہا کہ ریگن کے دور میں امریکہ ،حقانی نیٹ ورک کو سپورٹ کرچکا ہے۔مسئلے کے حل کےلئے طالبان سے مذاکرات شروع کئے جائیں۔