ننھی پری زینب کا آخری ہوم ورک جس نے سب کو اشکبار کردیا

لاہور (ویب ڈیسک) معصوم زینب کے ہاتھ سے لکھے گئے آخری مضمون نے عوام کو مزید رنجیدہ کر دیا۔ زینب کا آخری مضمون دنیا نیوز نے حاصل کر لیا۔ ننھی زینب کی کتابیں اور کاپیاں اسی طرح اس کے بیگ میں موجود ہیں، جن پر 4 جنوری تک کا ہوم ورک موجود ہیں۔

یہ وہی روز ہے جب زینب اغواء ہوئی اور پھر کبھی لوٹ کر گھر واپس نہ آئی۔ننھی پری زینب نے اپنے آخری ہوم ورک میں تحریر کیا کہ میرے والد کا نام امین ہے، میری عمر سات سال ہےاور میں قصور میں رہتی ہوں، میں اول جماعت میں پڑھتی ہوں، میں الفاروق اسکول میں پڑھتی ہوں۔

زینب کے تحریر کردہ یہ جملے اب بھی موجود ہیں، جو ہمیں جھنجھوڑ جنجھوڑ کر یہ بتاتے رہیں گے زینب ایک پاکستانی بچی تھی، جس کی معصومیت، اس کے بچپن کو ہمارے ہی معاشرے کے ایک درندے نے چھین لیا۔

زینب کے اغواء اور قتل کے بعد ننھی پری کے والدین پل پل مرنے لگے ہیں۔ ہر شخص کی زبان پر ایک ہی سوال ہے کہ درندہ انجام کو کب پہنچے گا؟