ن لیگ سے وابستگی شک و شبہ سے بالاتر ہے ،چوہدری نثار

ٹیکسلا/واہ(محمّد کلیم اللہ خان/سٹیٹ ویوز)پاکستان مسلم لیگ (ن) کے مرکزی راہنماء و سابق وزیر داخلہ چوہدری نثار علی نے کہا ہے نظریاتی اختلاف کے باوجود وفاداری کا تقاضا ہے کہ پارٹی پر موجودہ کٹھن کے موقع پر پارٹی کے ساتھ کھڑا رہا جا ئے اور میں بارہا اس کا اظہار کر چکا ہوں کہ نواز شریف کے موجودہ طریق کار سے اختلاف ہے مگر اس کے باوجود میں پارٹی وابستگی شک و شبہ سے بالا تر ہے۔

اس حلقہ سے وہ ممبر اسمبلی منتخب ہو ئے جو عدالتی حکم امتنا عی پر ہیں اور کبھی ایک جماعت اور کبھی دوسری جماعت میں قلا بازیاں لگا تے رہے۔ اُنہوں نے یہ بات لا لہ رخ میں ایک اجتماع سے خطاب کر تے ہوئے کہی۔ سابق وزیر داخلہ کے لیے مقامی پولیس کی بھاری نفری بھی موجود رہی۔ چوہدری نثار علی کا کہنا تھا کہ میں نے جہاں سے اپنی سیاسی زندگی کا آ غاز کیا نشیب وفراز آ ئے ، مگر میں نے قبلہ بدلا اور نہ وفاداری تبدیل کی۔ میرا طریق مفاد پرست سیاست دانوں سے الگ تھلگ ہے کہ میں سیاست مال بنا نے کے لئے نہیں کی بلکہ اسے عوامی خدمت کے لئے استعمال کیا۔ اُنہوں نے کہا کہ عدلیہ اور سیکورٹی اداروں سے محاذ آ رائی کسی صورت ملکی اور نہ ہی پارٹی مفاد میں ہے۔ میں اس پر میاں صاحب کو قائل کر نے کی بڑی کوشش کی کہ موجودہ حالات کا تقاضا ہے کہ پارٹی اور قوم کو متحد کیا جا ئے اور ملکی سلامتی کے لیے مل کر کام کیا جائے ۔ مگر بعض نادان دوست نواز شریف کو غلط مشورے دے رہے ہیں۔ مگر میں سر عام حق بات کر تا ہوں جو شاید اُنہیں پسند نہیں۔

چوہدری نثار علی کا کہنا تھا کہ واہ کینٹ ، ٹیکسلا کے عوام نے مجھے بہت محبت دی اور مجھے اس کا احساس ہے۔ میں اقتدار میں ہوں یا نہ ہوں حلقہ میں ترقیاتی منصوبہ جات نہیں رکنے دیئے۔