لندن ایئر پورٹ بند

لندن (سٹیٹ ویوز) لندن ایئرپورٹ کو اس وقت بند کردیا گیا جب تعمیراتی کام کرنے والے مزدوروں نے ایئر پورٹ کے قریب سے گزرنے والے دریائے تھامس سے دوسری جنگ عظیم میں استعمال کیا جانے والا بم برآمد کیا۔امریکی نشریاتی ادارے سی این این کی رپورٹ کے مطابق لندن ایئرپورٹ کے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ ’تعمیراتی کام کے دوران دوسری جنگ عظیم کے بم کی کنگ جورج فائیو ڈوک پر دریافت کے بعد لندن شہر کا ایئرپورٹ بند کردیا گیا‘۔

بم دریافت ہونے کے بعد میٹرو پولیٹن پولیس کو اس مقام پر طلب کیا گیا، جنہوں نے اس مقام کے اطراف میں رائل نیوی کی تعیناتی اور بم کی ساخت کے حوالے سے تصدیق کی۔ایئرپورٹ کے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ ’ایئرپورٹ کا عملہ میٹ پولیس، رائل نیوی اور دیگر اداروں سے مکمل تعاون کررہا ہے‘۔

میٹ پولیس کے مطابق بم کو مذکورہ مقام سے ہٹانے کا عمل جاری ہے جبکہ رائل نیوی نے بم کے اطراف میں 214 میٹر کا علاقہ خالی کردیا ہے تاکہ کسی بھی ناخوشگوار واقعے کی صورت میں قیمتی جانوں کو محفوظ کیا جاسکے۔یاد رہے کہ مذکورہ ایئر پورٹ بین الاقوامی پروازوں کی آمد و رفت کے لیے استعمال کیا جاتا ہے،

جہاں سے تجارت سے وابستہ افراد برطانیہ، یورپ اور امریکا کے لیے روانہ ہوتے ہیں تاہم یہ ایئر پورٹ لندن کے ہیتھرو ایئرپورٹ سے رقبے کے لحاظ سے چھوٹا ہے۔یہ بھی یاد رہے کہ مذکورہ ایئرپورٹ کے اطراف کے علاقے میں دوسری جنگ عظیم کے موقع پر انتہائی گنجان آباد تھا اور یہاں متعدد بڑی صنعتیں قائم تھیں۔