وفاقی وزارت خزانہ نےگلگت بلتستان کےاساتذہ کےمستقبل کافیصلہ کرلیا

اسلام آباد (زاہد حلیم/ سٹیٹ ویوز) وفاقی وزارت خزانہ نے گلگت بلتستان کے 406 سیپ اساتذہ کو مستقل کرنے کی منظوری دیدی اور باقی 714 سیپ اساتذہ کو بتدریج مستقل کرنے کیلئے صوبائی حکومت کو پلان بنانے کی ہدایت کی گئی ہے۔

اس سے پہلے فنانس ڈیپارٹمنٹ جی بی نے 2 ستمبر 2016ء اور 21 ستمبر 2017ء کو الگ الگ لیٹر کے ذریعے وفاقی وزارت خزانہ کو سیپ اساتذہ کی مستقلی کیلئے پوسٹیں تخلیق کرنے کی درخواست کی تھی۔ جس کو منظور کرتے ہوئے ابتدائی طور پر 406 سیپ اساتذہ کو مستقل کرنے کیلئے پوسٹیں تخلیق کرنے کی منظوری دیدی۔

دوسری جانب صوبائی وزیرتعلیم حاجی ابراہیم ثنائی نے کہا کہ سیپ اساتذہ کی کارکردگی، ماضی کا پس منظر اور تعلیمی قابلیت کو پرکھا جائے گا۔ 14 سو میں سے 406 قابل اور اچھی کارکردگی کا پس منظر رکھنے والے اساتذہ مستقل ہوں گے۔ باقی اساتذہ کو بھی سلسلہ وار بنیادوں پر مستقل کرنے کی کوشش کی جائے گی۔ بعض اساتذہ کو محکمہ تعلیم میں ٹیچر کی خالی اسامیوں پر ہی ایڈجسٹ کرنے کی تجویز بھی زیر غور ہے۔ باقی اساتذہ کو محکمہ تعلیم میں ضم کرنے یا نئی پوسٹیں تخلیق کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔