شہدائے کشمیر وحضرت بل کانفرنس میں سردارصغیرنے شرکاء کالہوگرمادیا

جدہ(سٹیٹ ویوز) جموں کشمیر لبریشن فرنٹ جدہ کے زیر اہتمام شہدائے کشمیر و شہدائے حضرت بل کانفرنس کا انعقاد کیا گیا۔جس کی صدارت جے کے ایل ایف جدہ کے سینئر نائب صدرسردار غلام فرید نے کی۔ تقریب کے مہمان خصوصی چیرمین جموں کشمیر لبریشن فرنٹ سردار صغیر خان ایڈووکیٹ تھے۔تقریب میںجے کے ایل ایف کے سینئر رہنما سردار پرویز ،سینئر وائس چیئرمین جے کے سی او سردار اشفاق خان ، خورشید متیال ،سابق چیئر مین جموں کشمیر کمیونٹی اوورسیز مولانا ارشاد الحق ،سیکریٹری جنرل خورشید متیال، سردار زرین ، راجہ ریاض و دیگرسیاسی جماعتوں کے قائدین نے خصوصی شرکت کی۔

کانفرنس میں کارکنان کا جوش و خروش دیکھنے کو ملا.تقریب سے خطاب کرتے ہوئے چیرمین جے کے ایل سردار صغیر خان ایڈووکیٹ نے شہدائے کشمیر و شہدائے حضرت بل کوشاندار الفاظ میں خراج عقیدت پیش کیا۔انہوں نے کہا کہ ہماری سیاسی جدوجہد کا بنیادی نقطہ ہی انسانیت اور انسانی وقار کی سربلندی کا ہے ، انسان کے جذبوں کے قدرو احترام کا ہے۔ ہماری بنیادی لڑائی ہی تو یہی ہے کہ وہ جو انسانیت کی تذلیل کرتے ہیں وہ جو انسانی جذبات کا قتل کرتے ہیں وہ جو انسانوں کے ارمانوں کا استحصال کرتے ہیں۔ و ہ استحصالی ہیں وہ ظالم ہیں ہماری لڑائی ان کے خلاف ہے۔ کشمیریوں کے حقِ خودارادیت کے حوالہ سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ستر سالوں سے کشمیری قوم کے ساتھ تسلسل کے ساتھ جھوٹ بولا جا رہے ۔ حقِ خودارادیت ہوتا ہی غیر مشروط ہے ۔ پاکستان اورجموں کشمیرکے روایتی سیاسی جماعتوں نے سیاستدان حقِ الحاق کو حقِ خودارادیت کے طور پر پیش کرتے ہیں جو کہ سراسر جھوٹ اور حقائق کے منافی ہے۔

کچھ سال قبل کی ایک کانفرنس کا حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اسلام آباد میں منعقدہ ایک کانفرنس میں جب اقوام متحدہ کے چارٹر سے کے مطابق حقِ خودارادیت کے مطالبہ کی قرارداد پیش کی گئی تو تمام روایتی کشمیری قیادت اس پر دستخط سے کترا رہے تھے ۔ لیکن ہم یہ واضح کر دینا چاہتے ہیں کہ ہم اقوم متحدہ کے چارٹر کے مطابق حقِ خودارادیت کے حصول کی جدوجہد کر رہے ہیں۔ریاست کے بنیادی انسانی حقوق کی عدم فراہمی کے باعث بڑی تعداد میں کشمیری عوام کے بیرون ملک منتقلی کے عمل پر شدید تنقید کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ایسی ریاست ایسے نظام کو میں نے اور آپ نے کیا کرنا ہے جس میں بنیادی انسانی حقوق مہیا کرنے سے قاصر ہو۔ ہمارے وسائل پر ہماری ملکیت اوراختیار نہیں ہے ۔

انہوں نے کہا کہ وہ وقت آ گیا ہے جب ھم کو متحد ہو کر ان دو غاصب قوتوں کے خلاف بھرپور مسلح عوامی جدوجہد کے ذریعے ریاست سے دونوں ممالک کی افواج کے انخلاء کے لیے عوامی تحریک کا آغاز کریں.انہوں نے انڈین اور پاکستانی فوجوں کے فائرنگ کے کھیل کی بھرپور مزمت کی اور مطالبہ کیا کہ ریاست میں کشمیریوں کے خون کی جو ھولی کھیلی جا رھی ھے اسکو فوری بند کیا جائے.چیرمین جے کے ایل ایف سردار صغیر خان ایڈووکیٹ صاحب نے مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کے ظلم و ستم کی بھرپور مزمت کی.

چیئرمین جے کے ایل ایف سردار صغیر خان ایڈووکیٹ نے جے کے ایل ایف جدہ کے منتظمین کو کامیاب پروگرام کروانے پر مبارکباد پیش کی.پروگرام سے جے کے ایل ایف کے سینٗر رہنما سردار پرویز خان، جموں کشمیر کمیونٹی اوور سیز کے وائس چیئرمین سردار اشفاق،جے کے ایل ایف جدہ کے صدر امتیازشیراز، جے کے ایل ایف کے سینئر رہنما سردار عظمت اے خان، جموں کشمیر کمیونٹی اوور سیز کے سیکریٹری جنرل خورشید متیال ، جے کے ایل ایف گلف زون کے سابق آرگنائزر قمر حمید ، ایس ایل ایف کی سنٹرل ایگزیکٹو کمیٹی کے سابق ممبر تیمور چغتائی و دیگر نے خطاب کیا۔