آزادی کا نعرہ گھرگھر پہنچ چکا، امان اللہ خان کے نظریئے کو آگے بڑھائیں گے، لبریشن فرنٹ گلف

ریاض ( راجہ عابد عزیز ) جموں کشمیر لبریشن فرنٹ کی جانب سے معروف کشمیری رہنما امان اللہ خان کی دوسری برسی کے حوالے سے اجلاس منعقد ہوا جس میں دیگر کشمیری رہنماؤں نے بھی شرکت کی، اس موقع پر اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے گلف زون کے سینئر نائب صدر سلیم آفتاب کا کہنا تھا کہ بدقسمتی کی بات ہے کہ چھ سو سال تک خود مختار رہنے والہ کشمیر آج غلامی اور ظلم وستم کے سائے تلے دبا ہوا ہے، اور اقوام عالم کے لئے بے بسی کی عملی تصویر بنا ہوا ہے، آزادی ہر انسان کا پیدائشی حق ہے، اور یہ حق کشمیری قوم جلد حاصل کرکے رہے گی۔

امان اللہ خان نے جو تحریک ہمیں سونپی ہے ہم پوری طرح اس کے ساتھ کھڑے ہیں اور ہمیشہ ان کے نظریئے کو آگے بڑھاتے رہیں گے۔ سرینگر سے تعلق رکھنے والے عبدالمجید بٹ کا کہنا تھا کہ جے کے ایل ایف میں وہی محب ہے جو امان اللہ خان کے نظریئے، سوچ اور فکر کا امین ہے کیونکہ امان اللہ خان نے اپنی پوری زندگی کشمیر کی آزادی اور کشمیریوں کو یکجان کرنے میں گزاری۔

عبدالمجید بٹ کا کہنا تھا کہ ایک دور تھا جب آزادی اور خود مختاری کو گالی سمجھا جاتا ہے مگر آج یہ نعرہ پورے کشمیر کے اندر گھر کر چکا ہے۔ کسی بھی قوم یا انسان کیلئے غلامی بدترین چیز ہے کیونکہ اس میں انسان کو انسان کے آگے جھکنا پڑتا ہے اور جب کسی بھی معاشرے میں انسانوں کو انصاف اور برابری کے حقوق نہ ملیں تو پھر آزادی کی تحریکیں جنم لیتی ہیں۔ یہی کچھ کشمیر میں بھی ہو رہا ہے۔

آج پیلٹ گن کی وجہ سے تین ہزار کشمیری بچے آنکھوں کی بینائی سے محروم ہو چکے ہیں، سینکڑوں کشمیری جیلوں میں قید ہیں اور روزانہ کئی نوجوان بھارتی فوج کی گولی کا نشانہ بن رہے ہیں۔ جمعیت علماءاسلام کے سردار عبدالباسط کا کہنا تھا کہ ہمیشہ وہ قوم اعلی روایت کی متحمل ہوتی ہے جو اپنے لیڈروں کو یاد رکھتی ہے اور امان اللہ خان کشمیری لیڈر تھے۔ انہوں نے آزادی کشمیر کے لئے خود کوساری زندگی وقف کئے رکھا۔

جے کے ایل ایف کے جنرل سیکرٹری عامر چشتی نے کہا کہ امان اللہ خان کی دوسری برسی پر ہمیں عہد کرنے کی بھی ضرورت ہے کہ ہم تمام کشمیری اکٹھے ہو جائیں اور ملکر اپنی آزادی کی تحریک کو آگے بڑھائیں، اجلاس سے طارق ایوب اور دیگر نے بھی امان اللہ خان کو خراج عقیدت پیش کیا اور ان کے کی جدوجہد کے حوالے سے روشنی ڈالی۔