ڈائریکٹ سیلنگ ایسوسی ایشن نےپاکستان میں کاروبارکیلئےنئی راہیں کھول دیں

کراچی (سٹیٹ ویوز) ڈائریکٹ سیلنگ ایسوسی ایشن پاکستان نے کراچی میں مرکزی دفتر کا افتتاح کرکےکام کاباقاعدہ آغازکردیا۔ افتتاحی تقریب کے مہمان خصوصی سینیٹرنیہال ہاشمی نےضروری قانون سازی کیلئےتجاویز مانگ لیں۔

تفصیلات کے مطابق ڈائریکٹ سیلنگ ایسوسی ایشن پاکستان قیام کے بعد تیزی سے اہداف کی جانب بڑھ رہی ہے اورپاکستان میں ڈائریکٹ سیلنگ انڈسٹری میں شامل کاروباری اداروں صارفین اورسرکاری اداروں کے درمیان برج بنانےمیں کامیاب ہوگئی ہے۔ڈائریکٹ سیلنگ انڈسٹری سے متعلق اہم کاروباری ادارے ممبربن چکے جبکہ ملک میں اور ملک سے باہر مزیدکاروباری ادارے ممبربننے کے پراسس سےگذررہےہیں۔

ڈی ایس اے پاکستان کے مرکزی دفترکےافتتاح کے موقع پرچیرمین مرکزی ایوان صعنت وتجارت برائے سٹینڈنگ کمیٹی ڈائریکٹ سیلنگ۔فاؤنڈرڈائریکٹرڈی ایس اےپاکستان شخ راحیل احمد۔صدرڈی ایس اے پاکستان انیس اےمرچنٹ سمیت ڈی ایس اےکےڈائریکٹرلیاقت علی خان ماگرےاوردیگر اہم عہدیداروں نےسینیٹرنیہان ہاشمی کو بتایا کہ ڈی ایس پاکستان نہ صرف مرکزی ایوان ہائے صنعت وتجارت کی ممبر ہے بلکہ پنجاب، سندھ، کے پی کے میں رجسٹرڈ ادارہ ہے۔

یہ ادارہ پاکستان میں ڈائریکٹ سیلنگ انڈسٹری سے وابستہ کاروباری اداروں کی ایسوسی ایشن ہے جسکی ممبرشپ کےحامل اداروں کی ذمہ داری ایسوسی ایشن قبول کریگی اور ان کاروباری اداروں کو عدم تحفظ سے نکال کر نہ صرف اسکے صارفین بلکہ سرکاری اداروں کو بھی برج کرنےکیلئے بنائی گئی ہے۔یہ اقدام پاکستان میں متعلقہ کاروبار کو اگلی سطح پر منتقل کررہی ہے اورپاکستان میں بزنس کے مواقعوں کوبڑھائےگی۔

سینیٹرکوبریف کیاگیاہے کہ ایسوسی ایشن کی وجہ سے نہ صرف اس انڈسٹری سے منسلک قانون کےدائرے میں آئیں گے بلکہ بڑی سطح پر حکومت کو ریونیو حاصل ہوگا اوربیروزگاری میں بھی خاطرخواہ کمی ہوگی۔ پاکستان کے پڑوسی ممالک نےاس انڈسٹری سے متعلق قانون سازی کرلی ہے لیکن ہم پاکستان میں ایسا نہ کرسکے۔اس موقع پرسینیٹر نے ایسوسی ایشن کے عہدیداروں سے قانون سازی کیلئے مسودہ مانگ لیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں