2

جامعہ کشمیرکیلئے 10 کروڑ روپے کی گرانٹ کا اعلان

مظفر آباد(سٹیٹ ویوز)وزیراعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر نے جامعہ کشمیر مظفرآباد کے لیئے دس کروڑ روپے کی گرانٹ کا اعلان کیا ہے اور یہ رقم فوری طور پر یونیورسٹی کو مہیا کرنے کی ہدایت کی ہے ۔وزیراعظم نے چھتر کلاس کیمپس کی تکمیل ،نیلم وجہلم کیمپس کے لیئے اراضی کی خرید اور مظفرآباد کیمپس کو درپیش مسائل حل کرنے کی ہدایات جاری کی ہیں ۔

ایوان وزیراعظم میں آزادکشمیر یونیورسٹی سے متعلق اعلیٰ سطحی اجلاس سے خطاب کر تے ہوئے وزیر اعظم نے دارالحکومت میں قائم اس قدیمی یونیورسٹی کی اہمیت و افا دیت کو محسوس کر تے ہو ئے انتہا ئی وسعت قلبی و با کمال مہر بانی کا عملی مظاہرہ کرتے ہو ئے نیلم اور جہلم کیمپسز کے لیئے متعلقہ ڈپٹی کمشنر صا حبا ن اوریونیورسٹی اسٹیٹ ڈیپارٹمنٹ کو ہدا یت کی کہ وہ بھی یونیو رسٹی کی ان اہم فوری ضروریات کی اہمیت محسو س کرتے ہو ئے کیمپسز کی تعمیر کے لیئے منتخب ایریا میں زمین کی ڈیمار کیشن کا کام مکمل کرکے رپورٹ پیش کر یں۔ اس کے بعد متعلقہ شعبہ جات اراضی ایوارڈ کی کاروائی کریں گے۔زمین کامعا وضہ حکو مت آزاد کشمیر اداء کر ے گی ۔

وزیر اعظم نے سیکرٹری ہائر ایجوکیشن کو ہدا یت کی کہ ہر دوکیمپسز کی تعمیر کے لیئے مطلو بہ ارا ضی کے معاوضہ کا تحمینہ مرتب کیا جا ئے تاکہ حکو مت رقم کی ادائیگی کا بروقت انتظام کر سکے اور اس کی بر وقت ادائیگی کو یقینی بنا ئے جا نے کے عملی اقدامات کیئے جا ئیں۔

یونیورسٹی کیمپسز کی اراضی کے معاو ضہ کے لیئے وزیر اعظم نے مو جودہ مالی سال کے اے ڈی پی سے 10کروڑ روپے مختص کیئے جا نے کا اعلان کیا،جبکہ سیکرٹری ہا ئر ایجو کیشن کو ہدا یت کی کہ دسمبر 2017ء سے قبل متذکرہ رقم کا بھی عملی طور پر بند وبست کیا جا ئے۔ہر دو کیمپسز میں مو جود کالجز کی بلڈ نگ کا جا ئزہ لیتے ہو ئے یونیورسٹی کی ضرورت کے مطا بق طلبا ء و طالبات کے لیئے ضروری مطلو بہ مکا نیت کی فراہمی کے لیئے سیکر ٹری ہا ئر ایجوکیشن اور ڈا ئر یکٹر اسٹیٹ جامعہ کشمیرمو قع پر جا کر فیصلہ کر یں ۔چھتر کلاس میں ہا ئر ایجو کیشن کمیشن کی طر ف سے دیئے گئے پرا جیکٹس میں جا ر ی کام میں حا ئل رکاوٹو ں کو دور کر نے کیلئے وزیر اعظم آزادکشمیر نے ڈپٹی کمشنر مظفرآباد کو ہدا یت کی کہ وہ فوری طورپر ایک ہفتہ کے اندر مسئلہ کا حل کریں۔

انہوں نے کہا کہ جا ری پر وجیکٹس میں رکا وٹوں کو کسی صورت قبول نہیں کیا جا ئے گا۔اس موقع پر وزیر اعظم نے اس عزم کا اظہار کیاکہ ملک و قوم کی ترقی کا سر چشمہ مستقبل کی تعلیمی یافتہ نو جوان نسل پر انحصار ہوتا ہے جو قومیں طلبا ء و طا لبا ت کو علم و تحقیق کی غر ض یونیورسٹی کی صورت میں اعلیٰ تعلیمی ادارے فراہم کر تی ہیں اور ان میں تد ریس و تحقیق کے کلچر کو فر وغ دینے کیلئے یونیورسٹیوں میں لا ئبریریز ، لیبا رٹریز اور انفا رمیشن ٹیکنا لوجی کی سہو لت کے علا وہ انھیں پر سکو ن ما حول و فضا ء جیسی نعمتوں مستفید کر نے پر تو جہ دیتی ہیں اور نتیجہتاً یہی طلبا ء و طالبات مستقبل میں قوم و ملت کا نام روشن کرنے کا سبب بنتے ہیں۔

وزیراعظم نے اس امر کی ہد ایت کی کہ ریاست کی عوامی خواہشا ت کومدنظر رکھتے ہو ئے ایسے شعبہ جات کا قیام عمل میں لا یا جا ئے جن سے نہ صرف علم و تحقیق سے استفادہ حا صل کیا جا سکے بلکہ طلبہ کومستقبل میں روزگا ر کے بہتر مواقع میسر آسکیں اور بیروزگاری کی بجا ئے اپنے والدین ، فیملی اور سو سائٹی کا سہا را بن سکیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں