AJK ESSAMBLY

3

آزادکشمیر اسمبلی میں برمی مسلمانوں کے حق میں قراردادیں منظور

مظفر آباد(سٹیٹ ویوز)آزاد کشمیر اسمبلی کے ممبران اپوزیشن لیڈر چوہدری محمد یاسین، سابق وزیر اعظم سردار عیتق احمد خان ، سابق امیر جماعت اسلامی عبدالرشید ترابی، ممبرا سمبلی پیر علی رضا بخاری نے کہا ہے کہ روہنگیا اورمقبوضہ کشمیرکے مسلمانوں کے قتل عام کے پیچھے بھارت کا ہاتھ ہے ،او آئی سی روہنگیا اور مقبوضہ کشمیر کے مسلمانوں کا قتل عام رکوانے کیلئے کردار ادا کرے ۔

اسمبلی میں پیش کی گئی برما اور مقبوضہ کشمیر کے مسلمانوں پر مظالم کے حوالے سے اپنی اپنی قراردادوں پر اظہار خیال کررہے تھے ۔

اپوزیشن لیڈر چوہدری محمد یاسین نے کہا کہ حکومت پاکستان کو آگے بڑھ کر برما کے مسلمانو ں کی سفارتی مدد کرنی چاہیے،پورے عالم اسلام کی امیدیں پاکستان کے ساتھ وابستہ ہیں ۔ پاکستان نے ہمیشہ دنیا بھر کے مسلمانوں کیلئے دردمندانہ کردار اداکیا ہے ۔

سردار عتیق احمد خان نے کہا کہ برما اور مقبوضہ کشمیر کے ایشو پر ایوان کی کمیٹی بنا کر مفصل بحث کرائی جانی چاہیے اور کنٹرول لائن پر بھارتی مظالم کو بے نقاب کرنے کیلئے وفد کی تشکیل ہونی چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ روہنگیا اور مقبوضہ کشمیر کے مسلمانوں کے قتل کے پیچھے بھارت کی سازش ہے اسی لیے بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی نے برما جا کر مسلمانوں کے قتل عام کی حمایت کی ہے۔

عبدالرشید ترابی نے کہا کہ پوری امت اس وقت آزمائش سے گزر رہی ہے ۔برما ، مقبوضہ کشمیر اور فلسطین میں مسلمانوں کو شہید کیا جارہا ہے۔ مسلمان دشمن قوتیں متحد ہو چکی ہیں ایسے حالات میں اسلامی ممالک کی تنظیم او آئی سی کو مثالی کردار ادا کرناچاہیے۔

انہوں نے ترک صدر کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ ترکی نے اپنے مسلمان بھائیوں کی جس طرح مکمل حمایت اور مدد کی ہے اس کی پیروی دیگر اسلامی ممالک کو بھی کرنی چاہیے۔

ممبر اسمبلی پیر علی رضا بخاری نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ سب کو مسلمانوں کا درد محسوس کرنا چاہیے ،حضورﷺ نے تمام مسلمانوں کو ایک جسم کی مانند قراردیا ہے ،جب جسم کے ایک حصے کو تکلیف ہوتی ہے تو سارا جسم بے قرارہوجاتا ہے ۔ اس وقت مسلمانوں پر جو ظلم ڈھائے جارہے ہیں یہ ایک منظم سازش کا حصہ ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کوئی بھی مذہب قتل عام کی اجازت نہیں دیتا سب مذاہب امن کی بات کرتے ہیں مگر مذہبی انتہاء پسندی قابل مذمت ہے ۔ انہوں نے کہا کہ مسلمانوں پر ظلم ہورہا ہے جبکہ عالمی ضمیر اس پر مجرمانہ خاموشی اختیار کیے ہوئے ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں