جیب کترے زندہ باد

یہ جلوس داتا کی نگری لاہور میں نکالا گیا تین نوجوانوں کو لوگوں نے کندھوں پر اٹھایا ہواتھا۔ان تینوں کے چہروںپرفخریہ مسکراہٹ تھی لوگ ان کے ہاتھ چومنے کیلئے ایک دوسرے کو دھکے دے رہے تھے لوگ بھی بہت خوش دکھائی دے رہے تھے جلوس میں بینروں پر جو لکھاتھا ایسے ہی نعرے بھی لگ رہے تھے مجھے کچھ سمجھ نہیں آرہا تھا نہ ایسا جلوس پہلے کبھی دیکھا نہ ایسے نعرے سنے “،”جیب کترے زندہ باد”” ہمارے ہیروجیب کترے “۔جیوے جیوے جیب کترے”قوم کی امید جیب کترے۔جلوس میں شامل ایک شخص سے پوچھا کچھ مجھے بھی ایسے بے مثل جلوس کے بارے میں بتاؤ؟اس شخص نے بتایا کہ ان جیب کتروں نے لاہورمیں چند روزقبل ایک سیاسی پارٹی کے رہنماؤں کی جیبیں کاٹی ہیں ہم چاہتے ہیں کہ ملک کے سارے جیب کترے باقی سیاسی پارٹیوں کے رہنماؤں کی جیبیں بھی کاٹیں ہم تو ان سیاستدانوں کا کچھ نہیں بگاڑ سکے ہیں اب ہماری ساری امیدیں ملک کے جیب کتروں پر ہیں ۔ایک بینرپر شعرلکھاتھا۔
قوم کی کاٹتے ہو جو جیبیں
ان کی جیبیں کٹی ہیں پہلی بار
جیب کتروں تمہیں مبارک ہو
بدلہ ان سے لیا ہے پہلی بار