مہران سپائسز کرکٹ کلب کے زیر اہتمام گولڈن جوبلی تقریب کا انعقاد

ریاض ( راجہ عابد عزیز ) سعودی عرب کے دارالحکومت ریاض میں مہران سپائسز کرکٹ کلب کے زیر اہتمام 1992 – 2017 گولڈن جوبلی کی تقریب کا شاندار انعقاد ریاض کے مقامی ہوٹل میں کیا گیا جس میں شائقین کرکٹ اور مختلف مکتبہ فکر سے تعلق رکھنے والے افراد نے بھر پور شرکت کی ۔

تقریب کا باقاعدہ آغاز تلاوت قرآن پاک سے کیا گیا جبکہ نظامت کے فرائض مہران سپائسز کرکٹ کلب کے منیجر گل شاد حسین نے سر انجام دیتے ہوئے آنے والے تمام معزز مہمانوں اور حاضرین کو خوش آمدید کہا اور مہران سپائسز کرکٹ کلب کی پچیس سالہ کارگردگی پر تفصیلی روشنی ڈالی تقریب کے مہمان خصوصی پاکستان سفارتخانہ ریاض کے ویلفیئر اتاشی عبدالشکور شیخ تھے جبکہ صدرات عبدالحمید ابو فاروق نے کی تقریب کے اعزازی مہمانوں میں سعد عبدالغنی الشمرانی ، چیئرمین آدمہ شمران ؛ ریاض کرکٹ لیگ کے صدر خینف بابر ، اے ایس ایسوسی ایٹ کے چیئرمین آصف شیخ شامل تھے ۔

تقریب کے مہمان خصوصی عبدالشکور شیخ نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے مہران سپائسز کرکٹ کلب کے تمام عہدیدارن اور کھلاڑیوں کو گولڈن جوبلی پر مبارک باد دیتے ہوئے زبردست خراج تحسین پیش کیا انہوں نے کہا سعودی عرب میں کرکٹ کے فروغ کے لیے جو کام ہو رہا ہے وہ قابل ستائش ہے عبدالشکور شیخ نے کہا آج کے اس جدید ٹیکنولوجی اور انٹرنیٹ کے دور میں بہت سے نوجوان ٹی وی ، کمپیوٹر ، موبائل تک محدود ہوکر رہ گئے ہیں اور ہماری نوجوان نسل اس سے بری طرح متاثر ہورہی ہے لوگ آج کے جدید دور میں اڑنا سیکھ چکے ہیں مگر آپس میں باہمی روابط ، اپنے اہل خانہ اور کھیل سے اپنی توجہ ختم کر رہے ہیں جو ہمارے لیے لمحہ فکریہ ہے ۔

مہمان خصوصی نے کہا پاکستانی عوام کے سعودی عرب کے ساتھ روحانی تعلقات ہیں ہمارے دل ایک دوسرے کے ساتھ جڑے ہوئے ہیں اور محض کرکٹ یا کسی اور وجہ سے ہی نہیں بلکہ حرمین شریفین کی خاص وجہ بھی ہے عبدالشکور شیخ نے مزید کہا کہ ہم سب پاکستانی سعودی عوام کے ساتھ متعد ہو کر دہشت گردی ، اسلام کی سربلندی ، حرمین کی خفاظت اور سعودی عرب کی ترقی خوشحالی کے لیے محبت کے ساتھ اپنی خدمات ایسے ہی سر انجام دیتے رہیں گے کرکٹ کے حوالے سے مہران سپائسز کرکٹ کلب ، آصف شیخ ، خینف بابر اور دیگر جو کردار ادا کر رہے ہیں وہ قابل تعریف ہیں مہران سپائسز کرکٹ کلب کے سرپرست اعلی سعد عبدالغنی الشمرانی نے اپنے خطاب میں کہاکہ کھیل کسی بھی صحت مند معاشرے کا اہم حصہ ہوتے ہیں جو معاشرے میں مثبت رجحانات اور صحت مند مقابلے کو پروان چڑھاتے ہیں انہوں نے مہران سپائسز کرکٹ کلب کے کھلاڑیوں کو اچھے سے اچھا کھیل پیش کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے اپنے ہر ممکنہ تعاون کی یقین دہانی کروائی اور مہران سپائسز کرکٹ کلب کے لیے 25 ہزار ریال کا اعلان بھی کیا ۔

مہران سپائسز کرکٹ کلب کے چیئرمین آدمہ شمران نے مہران سپائسز کرکٹ کلب کے کھلاڑیوں اور عہدیداروں کو گولڈن جوبلی پر مبارکباد دیتے ہوئے خوشی کا اظہار کیا اور کرکٹ کے فروغ کے لیے اپنے بھر پور تعاون کا یقین دلایا تقریب کے اعزازی مہمان خینف بابر نے کہا مہران سپائسز کرکٹ کلب کی پچیس سالہ کارگردگی قابل ستائش ہے انہوں نے کہا سعودی گورنمنٹ کی کرکٹ کے فروغ کے لیے کوششیں ناقابل فراموش ہیں ۔حنیف بابر نے مزید کہا کہ آج کے نوجوانوں کو کرکٹ کے کھیل سے مکمل روشناس کروانے کی ضرورت ہے تاکہ مستقبل کے معمار اچھی کرکٹ پیش کرکے ملک و قوم کا نام روشن کریں انہوں نے مہران سپائسز کرکٹ کلب کی پوری مینجمینٹ کو مبارک باد پیش کرتے ہوئے نیک تمناؤں کا اظہار کیا۔

مہمان اعزازی اے ایس کرکٹ ایسوسی ایٹ کے چیئرمین آصف شیخ نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا موجودہ کرکٹ کو غیر سیاسی بنانے کی ضرورت ہے ہم سب کو چاہیے سیاست سے بلا تر ہو کر کرکٹ کے فروغ کے لیے اپنا اپنا مثبت رول ادا کریں تاکہ ہماری یوتھ کو سیاست سے پاک اپنی کارگردگی پیش کرنے کا موقع ملے آصف شیخ نے کہا کہ ریاض میں کرکٹ کی سرگرمیاں قابل تحسین ہیں آصف شیخ نے مہران سپائسز کرکٹ کلب کی خدمات کو سراہا مہران سپائسز کرکٹ کلب کے کپتان اسد خان نے کہا انشاءاللہ ہم دلجوئی سے کرکٹ کھیل کر اپنے ملک اور اپنی قوم کا نام روشن کریں گے وہ دن دور نہیں کہ جب کرکٹ کی دنیا میں مہران سپائسز کرکٹ لیگ کا بھی ایک اعلی مقام اور نام ہوگا تقریب میں دیگر جن مقررین نے خطاب کیا ان میں جاوید منور ، رضا الرحمن ، عبدالروف ، ڈاکٹر سید عبدالشاکر ، طارق بٹ ، عمران حمید ، عثمان شاہ اور علی شمرانی شامل تھے تقریب کے آخر میں مہران سپائسز کرکٹ کلب کی طرف سے تمام کھلاڑیوں میں انعامات تقسیم کیے گئے اور تمام معزز مہمانوں کو یادگاری شیلڈیں پیش کی گئیں تقریب کے تمام معزز مہمانوں اور حاضرین نے مہران سپائسز گولڈن جوبلی کی تقریب سجانے پر تمام عہدیداروں کو شاندار انداز میں خراج تحسین پیش کیا اور امید ظاہر کی کہ مہران سپائسز کرکٹ کے فروغ کے لیے اپنی تمام تر کوشیش بروے کار لاتے ہوئے نوجوان نسل کو اس کھیل کی طرف راغب کریں گے