سٹیٹ ویوز کےرپورٹرعامرگرد​یزی کوباغ میں پابند سلاسل کردیاگیا

باغ(سٹاف رپورٹر/سٹیٹ ویوز) سیشن جج راولاکوٹ ارباب اعظم نے باغ سےتعلق رکھنےوالے ڈیجیٹل میڈیاگروپ سے وابستہ رپورٹر عامرگردیزی کو پابند سلاسل کرا دیا۔

ابتدائی اطلاعات کے مطابق سیشن جج کی ڈرائیونگ کی وجہ سے صحافی سمیت طلباء اور طالبات اور عام لوگوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔جب صحافی نے جج کو کہا کہ راستہ موجود ہے آپ گاڑی غلط سائیڈ سے ہٹا کر دوسری سائیڈ کریں تو جج طیش میں آگئے اور گاڑی وہیں چھوڑ کر پولیس اسٹیشن پہنچ گئےاور تھانے میں درخواست دے دی۔

پولیس نے موقع پر پہنچ کر جگہ کا معائنہ کیا صحافی کو پولیس اسٹیشن بلایا گیا تو صحافی کے ساتھ عینی شاہدین بھی پولیس اسٹیشن پہنچ گئے اور پولیس کو بتایا گیاکہ غلطی جج کی ہی ہےتاہم سیشن جج نےصحافی کو پابندسلاسل کرادیا۔

اس موقع پر باغ آزاد کشمیر کی صحافتی کمیونٹی میں تشویش کی لہر دوڑ گئی۔ باغ پریس کلب کے صدر پرویز الحسن طاہر اور آزاد کشمیر سنٹرل یونین آف جرنلسٹس کے صدر طاہر عباسی اور دیگر صحافی برادری نے پولیس اسٹیشن باغ میں احتجاج کیا اورصحافی عامر گردیزی جو اس وقت ڈیجیٹل میڈیاگروپ سٹیٹ ویوز اور سچ نیوز کے ساتھ وابستہ ہیں ان کی رہائی کا مطالبہ کر ڈالا۔

اس معاملے میں سیشن جج ارباب اعظم سے انکا موقف جاننے کیلئے سٹیٹ ویوز نے رابطہ کرنے کی کوشش کی لیکن ان سے رابطہ نہ ہوسکا جبکہ دوسری جانب صحافی کی گرفتاری اورجج کی جانب سے اختیارات کے استعمال پر سوشل میڈیا پرلوگوں نےشدید تشویش کا اظہارکیا ہے جبکہ صحافتی تنظمیوں نے بھرپور احتجاج سمیت قانونی چارہ جوئی کافیصلہ کیا ہے