چکوال کےضمنی انتخابات میں تحریک انصاف کیخلاف پراپیگنڈا بےنقاب

چکوال (سٹیٹ ویوز) حلقہ پی پی 20 پرضمنی انتخاب میں ن لیگ کا منفی پراپیگنڈا منظر عام پرآگیا.

پاکستان تحریک انصاف کی جانب سے مختلف سیاسی خاندانوں کی جانب سے تین امیدوار سامنے آئے جن میں سے دیہی علاقہ سے تعلق رکھنے والے کو فوقیت دیتے ہوئے اور باقاعدہ سروے کروا کر ٹکٹ جاری کیا گیا چونکہ پاکستان تحریک انصاف کا امیدوار مضبوط ہےاور ن لیگ اندرونی ٹوٹ پھوٹ کا شکار بھی ہے اس لئے منفی پراپیگنڈا ڈوبتے کوتنکے کے سہارے کے طور پراستعمال کیا جارہا ہے.

سٹیٹ ویوز کی جانب سے کیے جانے والے سروے میں دوسرے امیدواروں کے بیانات کے مطابق تحریک انصاف کے تمام ضلعی ، مقامی لیڈر اپنے چیئرمین عمران خان کے فیصلے پر متفق اور خوش ہیں ۔

چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کا پی پی 20کے ضمنی انتخاب کے لیے پارٹی اور پارٹی وابستگان کے بہترین مفادات کے لیے کیے گئے فیصلہ پر کارکنوں میں بھر پور جوش و خروش پیدا ہوا ہے ، پارٹی نے مکمل سائنسی سروے کے بعد دیہاتی علاقہ سے تعلق رکھنے والے امیدوار کو پارٹی ٹکٹ دینے کا فیصلہ چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے کیا، ”ن“ لیگ کو ٹف ٹائم دینے کے لیے بڑی سوچ بچار کے بعد راجہ طارق افضل کالس کو ٹکٹ دینے کا فیصلہ ہوا جس پر ”ن“ لیگ نے پروپیگنڈہ شروع کر دیا ہے کہ پی ٹی آئی میں پھوٹ پڑ گئی ہے حالانکہ چکوال کی مقامی پی ٹی آئی کی قیادت اور کارکن پوری طرح متحد ہےاور مقابلہ کرنے کے لیے پرجوش ہیں۔