محکمہ خوراک کی غفلت کے باعث باغ میں مضر صحت اورناقص آٹے کی سپلائی جاری

باغ آزادکشمیر(سٹیٹ ویوز۔ طاہر احمد عباسی سے ) ضلع باغ میں ،ناقص اور مضر صحت آٹے کی سپلائی جاری ،محکمہ خوراک آزاد کشمیر لمبی تان کر سو گیا ،پرائیویٹ و سرکاری ملز کا انتہائی غیر معیاری اور مارکیٹ میں سب سے سستا ملنے والا آٹا لا کر باغ میں مہنگے داموں فروخت کیے جانے لگا،جس سے عوام میں معدے اور پیٹ کی بیماریاں تیزی سے پھیل رہی ہیں،باغ شہر میں فوڈ ایکٹ کا سر عام مذاق اڑایا جانے لگا،ایک عرصہ سے غیر معیاری آٹے کی فروخت کی جا رہی ہے جس میں منظم گروہ ملوث ہے ، حکومت فوری نوٹس لے .

تفصیلات کے مطابق باغ شہر اور مضافات کی دکانوں پر انتہائی ناقص اور غیر معیاری آٹے کی فروخت کا سلسلہ سر عام جاری ہے ،فوڈ انسپکٹراور محکمہ خوراک باغ کے ذمہ داران کے بارے میں کوئی علم نہ ہے کہ وہ کہاں ہیں اور کیا کر رہے ہیں شہری چیخ رہے ہیں کہ ہمیں ناقص آٹا ربڑ نما دیا جا رہا ہے ،جو صحت کے لیے انتہائی نقصان دے ہے ،خواجہ رتنوئی سے تعلق رکھنے والے متعدد افراد گزشتہ روز ناقص آٹے کے نمونے لے کرپریس کلب آئے انہوں نے کہا کہ اس آٹے کو پانی میں دھونے سے یہ ربڑ کی طرح پھیل رہا ہے اور اس کی صورت حال بھی کھانے کے قابل نہ ہے اور اس کے استعمال سے لوگ معدے اور پیٹ کی بیماریوں میں مبتلا ہو رہے ہیں انہوں نے کہا کہ آٹے کی تھیلی پر سپیشل کوالٹی آٹا ڈبل آنار معارکہ گندھارا فلوملز واہ کینٹ راولپنڈی جس پر 0514849581-82-83اور دیگر موبائل نمبر درج ہیں.

اس فلور ملز اور دیگر فلور ملز سے سپلائی ہونے والا آٹا انتہائی مضر صحت ہے اور اس آٹے کی فراہمی باغ میں جاری ہے اور مضافاتی علاقوں میں بھی اسی طرح کے غیر معیاری آٹا فراہم کیا جا رہا ہے ،باغ میں ایک عرصہ سے صارفین چیخ رہے ہیں کہ آٹا انتہائی ناقص فروخت کیا جا رہا ہے ،جس پر محکمہ خوراک خاموش تماشائی بنا ہوا ہے ،پریس کلب انتظامیہ نے یہ معاملہ مقامی انتظامیہ کے نوٹس میں بھی لایا ہے کہ غیر معیاری آٹا فراہم کرنے والوں کے خلاف فوری کارروائی عمل میں لائی جائے ۔