پنجاب کے اہم شہر میں درجنوں مکانات منہدم ہونیکا خدشہ،الرٹ جاری

اوکاڑہ (سٹیٹ ویوز) اوکاڑہ کی دیپالپور میں محکمہ سوئی گیس کے ٹھیکیدار کی غفلت اور لا پروائی سے محلہ قاضیانوالہ کے درجنوں مکانات منہدم ہونے کے خطرے کے ساتھ جانی نقصانات کا اندیشہ ۔تفصیلات کے مطابق محلہ قاضیانوالہ دیپالپور میں محکمہ سوئی گیس کے ٹھیکیدار نے گیس پائپ لائن بچھانے کے دوران سیوریج پائپ لائنوں کو توڑنے کے بعد انتہائی غیرذمہ داری کا مظاہرہ کرتے ہوئے پائپ لائن پر اینٹیں رکھ کر اس پر مٹی ڈال دی ۔

جس سے سیوریج کا گندا پانی درجنوں مکینوں کے مکانات کی بنیادوں میں داخل ہو کر تین تین منزلہ عمارات کھنڈرات کا منظر پیش کرنے لگیں۔دیواروں سے اینٹیں علیحدہ ہو کر دو سے تین فٹ تک دیواروں میں دراڑیں آگئیں ۔ھنستے بستے گھر بھوت بنگلہ کا منظر پیش کرنے لگے جبکہ میونسپل کمیٹی کی جانب سے الرٹ جاری کردیا۔سوئی گیس کا یہ منصوبہ درجنوں ہنستے بستے گھروں کو لے ڈوبا…

اس حوالہ سے چئیرمین میونسپل کمیٹی دیپالپور میاں فخر مسعود بودلہ کو اطلاع دی گئی تو فوری طور پر متاثر جگہ پر پہنچ کر چیف آفیسر اور دیگر عملہ کو حکم دیا کہ متاثرہ گھروں کے قریب فی الفور پائپ لائن تبدیل کر کے نئی سیوریج پائپ لائن بچھا کر تین یوم کے اندر رپورٹ کریں ۔جبکہ متاثرین مکانات محلہ قاضیانوالہ ماسٹر محمد اقبال بھٹی ،محمد طارق بھٹی ،حاجی محمد رفیع سیالکوٹی ،منور عباس ،بیوہ علی شیر ،جعفر علی حیدری ،الطاف حسین چوہدری ،اور درجنوں متاثرین نے مطالبہ کیا ہے کہ محکمہ سوئی گیس پائپ لائن بچھانے والے غیر ذمّہ دار ٹھیکیدار مکانات کے نقصانات کا فوری سدباب کرے۔

محلہ قاضیانوالہ،محلہ لالو جسرائے،محلہ گیلانیہ،محلہ گوردیال کے سینکڑوں مکینوں نے ایم این اے راؤ محمد اجمل خان سے مطالبہ کیا ہےکہ سوئی گیس پائپ لائن بچھانے کی وجہ سے کروڑوں کے نقصانات کا فی الفور ازالہ کیا جائے ۔

متاثرین نے وزیراعظم شاھد خاقان عباسی ،وزیرِ اعلیٰ میاں محمد شہبازشریف ،چیف جسٹس ہائی کورٹ ،چیف جسٹس سپریم کورٹ ،کمشنر ساہیوال ڈویژن اور ڈپٹی کمشنر اوکاڑہ سے فی الفور مذکورہ ٹھیکیدار کے خلاف سو مو ٹو ایکشن لے کر کارروائی عمل میں لائیں اور متاثرین کے نقصانات کا ازالہ کیا جائے۔