شرقی گوجرخان میں دہشت کی علامت خطرناک گروہ قانون کے شکنجے میں آگیا

گوجر خان(راجہ ارشد محمود/سٹیٹ ویوز) شرقی گو جر خان میں گوجر خان پولیس نے قتل ڈکیتی بھتہ خوری میں ملوث دہشت کی علامت خطرناک گروہ گرفتار کر لیا ملزمان کے خلاف پنجاب کے متعدد تھانوں میں مقدمات درج ہیںقاضیاں چوکی نے گرفتاری میں اہم کردار ادا کیا۔

اس حوالے سے گزشتہ روز ایس ڈی پی او گوجر خان کے دفتر میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ایس ایس پی آپریشن محمد بن اشرف نے بتایا کہ اصغر گینگ گزشتہ کچھ عرصے سے شرقی علاقہ میں عوام کے لئے خوف و دہشت کی علامت بنا ہوا تھا اور ان کی وجہ سے جبر اور گردونواح کے علاقوں میں عوام سر شام ہی گھروں میں دبک جاتے تھے ایس ایس پی آپریشن نے بتایا کہ گرفتار ہونے والوں میں گروہ کا سرغنہ اصغر علی شاہ سکنہ کاہلی دھمنویا محمد صدیق سکنہ موہڑہ بھٹیاں اسلام پورہ جبر مختار حسین سکنہ پنڈ دادن خان اور شیخ محمد زیارب سکنہ سوہاوہ مرزیاں اسلام پورہ جبر شامل ہیں۔

انھوں نے بتایا کہ گروہ کے سرغنہ اصغر کے خلاف تھانہ فیصل آباد میں دوران دکیتی قتل کا مقدمہ درج ہے جس میں اسے سزائے موت سنائی گئی تھی لیکن دوران قید ملزم نے مدعی پارٹی کو ڈرا دھمکا کرراضی نامہ کر لیا تھا ایس ایس پی آپریشن نے مزید بتایا کہ ملزمان ڈکیتی کی واردات باقاعدہ منصوبہ بندی سے کرتے تھے گروہ کے دیگر اراکین کی گرفتاری کے لئے بھی کاوشیں جاری ہیں ایس ایس پی آپریشن نے بتایا کہ ملزمان کے خلاف گوجر خان مندرہ کلر سیداں کے علاوہ فیصل آبادمیں بھی مقدمات درج ہیں۔

انھوں نے واضح کیا کہ جرائم پیشہ افراد کے خلاف گھیرا تنگ کر دیا گیا ہے اور عوام کا سکون برباد کرنے والوں سے کسی قسم کی کوئی رعایت نہیں کی جائے گی ایس ایس پی آپریشن نے بتایا کہ ملزمان کے قبضے سے لوٹی گئی رقم غیر ملکی کرنسی اسلحہ اور دیگر سامان مسروقہ بھی بر آمد کیا گیا ہے جو شناخت کے بعد اصل مالکان کے حوالے کر دیا جائے گا اس موقع پر سرکل کے تینوں ایس ایچ اوز اور دیگر اہلکار بھی موجود تھے۔