Afghanistan first test

بھارت نے افغانستان کے پہلے ٹیسٹ کا جشن “کرکرا”کردیا

ممبئی(نیوزڈیسک)افغانستان کے پہلے ٹیسٹ کی خوشیاں ماندپڑنے لگیں، بھارت نے اپنے ’دوست‘ کے تاریخی مقابلے کا مزہ کرکرا کرنے کا پورا انتظام کرلیا۔

افغانستان نے ٹیسٹ اسٹیٹس حاصل ہونے کے بعد پانچ روزہ کرکٹ میں اپنے سفر کا آغاز بھارت میں کرنے کا حیران کن فیصلہ کیا،اس مقصد کیلیے رواں برس جون کی تاریخ مقرر ہوئی جب بنگلور میں واحد میچ کھیلا جائے گا۔ اس میں بھارتی کپتان ویرات کوہلی تو پہلے ہی شریک نہیں ہورہے۔

اب یہ رپورٹس سامنے آئی ہیں کہ مزید 8 ٹیسٹ اسپیشلسٹ پلیئرز کی بھی میچ میں شرکت کا امکان کم ہے، جس بی ٹیم نے مارچ میں سری لنکا میں ٹوئنٹی 20 ٹرائنگولر سیریز کھیلی تھی اسی کو میدان میں اتارا جا سکتا ہے۔

ویرات کوہلی جون میں سرے کی نمائندگی کریں گے جبکہ باقی 8 کھلاڑیوں کو بھی انگلش کنڈیشنز سے ہم آہنگ کرنے کیلیے قبل از وقت وہاں بھیجنے پر غور کیا جا رہا ہے، ان میں ایشون، بھونیشورکمار، جسپریت بمرا، ایشانت شرما، اجنکیا راہنے، چتیشور پجارا، مرلی وجے اور شیکھر دھون شامل ہیں۔

بی سی سی آئی ذرائع کا کہنا ہے کہ ٹیسٹ اسپیشلسٹ پلیئرز کو قبل ازوقت انگلینڈ بھیجنے کی منصوبہ بندی ہورہی ہے، بنگلور میں افغانستان سے واحد میچ کھیلنے سے زیادہ فائدہ انھیں وہاں جانے سے ہوگا۔

واضح رہے کہ کوہلی کے ساتھ ایشون کا بھی کاؤنٹی کنٹریکٹ ہے، وہ بھی آئی پی ایل ختم ہونے کے فوری بعد رخصت ہوجائیں گے،ایشانت شرما اور چتیشور پجارا تو پہلے ہی وہاں پر کاؤنٹی کرکٹ کھیل رہے ہیں۔

ذرائع نے بتایا کہ یہ بات تو طے ہے کہ کاؤنٹی سیزن میں مصروف پلیئرز وہیں رہیں گے، باقی تین یا چار ٹیسٹ کرکٹرز کو راہول ڈریوڈ کی نگرانی میں اے ٹیم کے ہمراہ انگلینڈ بھیجا جائے گا۔ 8 مئی کو تین اسکواڈز کا اعلان ہوگا،ان میں افغانستان سے جون میں شیڈول ٹیسٹ، اس کے بعد دورئہ برطانیہ اور اے اسکواڈ شامل ہیں۔ یہ معلوم ہوا ہے کہ اے ٹیم میں سینئر سائیڈ کے 7 ریگولر پلیئرز بشمول راہنے، مرلی، روہت اور ہردیک بھی موجود ہونگے۔