یواین آئی ڈی او کے زیراہتمام گلگت بلتستان میں ایگرفوڈ بزنس کا آغاز

اسلا م آباد(سٹیٹ ویوز )UNIDOکی جانب سے شر وع کر دہ منصوبے ایگر فوڈ بزنس سے مسلک گلگت بلتستان کے کسانوں کی خوشحالی اورعلاقہ ترقی میں اہم کر دار ادا کریگا اس منصوبہ کی تکمیل سے پھل فروشی اور مچھلی کی صنعت سے وابستہ کسانوں کو بہتر رہنمائی و مد د مہیا ہو سکے گی جس سے وہ اپنے کاروباری مسائل میں کمی اور آمدن میں اضافہ کے قابل ہو سکیں گے ان خیالا ت کا اظہا رگذشتہ روز ماہرین نے UNIDOکی جانب سے شروع کئے گئےمنصوبے کے بارے میں منعقدہ سٹیئرنگ کمیٹی کے اجلاس سے خطاب کر تے ہوئے کیا ۔

اجلاس کی صدارت گلگت بلتستان کے سیکر ٹری پلاننگ اینڈ ڈیویلپمنٹ بابر امان نے کی جبکہ اس موقع پر UNIDOکی پاکستان میں نمائندہ نادیہ آفتاب کے علاوہ ،ILO،IFAD،آغا خان فائونڈیشن اور جائیکا کے نمائندوں نے شرکت کی ،اجلا س سے خطاب کر تے ہوئے سیکر ٹری پی اینڈ ڈی با بر امان بابر نے کہاکہ قبل از کاشت ،بعد از کاشت ،پروسیسنگ اور پیکجنگ وغیرہ جیسے ایشوز کے حل کیلئے UNIDOکا مجوزہ منصوبہ ایک بہترین ذریعہ ثابت ہو گا موجودہ ماحولیاتی تبدیلیوں ،پانی کی کے علاوہ مطلوبہ استعداد کار نہ ہو نے کے باعث علاقہ کے کسان اپنی فصلوں سے مطلوبہ آمدن و نتائج حاصل نہیں کر سکتے ایسے میں UIIDOکی جانب سے شروع کر دہ یہ منصوبہ کسانوں کیلئے ایک انقلاب ثابت ہو گا جس سے ان کی آمدن میں قابل ذکر اضافہ ہو گا

اور وہ اپنی فصلوں سے زیادہ سے زیادہ بہتر نتائج حاصل کر سکیں گے اس موقع پر شرکا ء کو اس منصوبہ کے تحت ہو نیوالے ابتدائی سر وے کے نتائج سے آگاہ کر تے ہوئے بتا یا گیا کہ ابتدائی طور پرسیکر ٹری زراعت سجاد حیدر کی معاونت سے اس منصوبہ کے تحت چیری ،سیب اور ٹرائوٹ مچھلی کے حوالے سے علاقائی سروے کیا گیا تا ہم کمیٹی کی سفارشات کی روشنی میں اس منصوبہ کو مزید آگے بڑ ھا یا جا ئے گا اس موقع پر شرکا ء کوUNIDOکی جانب سے ایگر فو ڈ ویلیو چین کے بارے میں بھی آگاہی فراہم کی گئی اور بتا یا گیا کہ گلگت بلتستان کی حکومت اس منصوبہ میں شریک کار دیگر ڈویلپمنٹ پارٹنرز کی بھی بھر پو رحوصلہ افزائی کر تی ہے تا کہ علاقہ کے کسان زیادہ سے زیادہ تعداد میں اس منصوبہ سے استفادہ حاصل کر سکیں .

سٹیئرنگ کمیٹی کے اجلا س کے شر کا ء نے مذکورہ منصوبہ کے حوالے سے ٹرسٹ فنڈ معاہدہ اور حکومتی منظوری کیلئے ایک باقاعدہ ٹائم فریم پر بھی مکمل اتفاق کیا UNIDOکے مرکزی دفتر ویان کی جانب سے متعارف کروائے گئے اس منصوبہ PAAIDکے پراجیکٹ منیجر علی بدر نا نے شرکاء کو اس منصوبہ کے بارے میں آگاہ کیا کہ کس طرح غیر موثر پالیسی کے بجائے موثر و فائد ہ مند اقدامات کے ذریعہ ح علاقہ میں زرعی ترقی کیلئے مختلف تر جیحات کو استعمال میں لا کر اس شعبہ کو ترقی دی جا سکتی ہے اس موقع پر شرکا ء نے شرکا ء نے اتفاق کیا کہ کسی ایک پھل یا مچھلی کے بجائے مختلف پھلوں و مچھلیوں پر منصوبہ کو آگے بڑ ھا یا جائے گا اور اس کے نتائج سے با خبر و آگاہ رہنے کیلئے ایک یا زائد ماڈل فارم منتخب کئے جائینگے..

UNIDOکی پاکستان کیلئے نمائندہ نادیہ آفتاب نے اس منصوبہ کے پس منظر پر روشنی ڈالتے ہوئے ون UNاور UNIDOکی جانب سے فنڈز منصوبہ کیلئے فنڈز فراہمی کو سراہتے ہوئے حکومت گلگت بلتستان کی جانب سے بھر پور تعاون پر ان کا شکریہ ادا کیا اور کہاکہ حکومت گلگت بلتستان کی جانب سے اپنے صوبہ کے کسانوں کی ترقی کیلئے اس منصوبہ کی کامیابی کیلئے عزم لائق تحسین ہے انہوں نے اس منصوبہ میں کسانوں ،خواتین ایسوسی ایشن ،خواتین کسانوں اور پھل فروشی سے منسلک چھوٹے کا روباری اداروں کے سربراہان کی بھی اس منصوبہ کی کامیابی کیلئے کی جانیوالی کاوشوں کی تعریف کی..

انہوں نے کہاکہ UNIDOعلاقہ میں کسانوں کی خوشحالی و ترقی کیلئے اپنا بھر پو ر تعاون جا ری رکھے گا ،گلگت بلتستان کی عوام کی جانب سے یو این آئی ڈی او کی جانب سے عوام کے لیے لیے کیے جانے والے اقدامات پر زبردست خراج تحسین پیش کیا گیا ۔