لندن سےشجاعت بخاری قتل کیخلاف آواز بلند،معاملہ عالمی سطح پر اُٹھانے کا فیصلہ

لندن، لوٹن( سٹیٹ ویوز+ شیراز خان) مقبوضہ کشمیر میں رواں ماہ 14 جون کو بھارت کی جانب سے قتل کئے جانیوالے معروف کشمیری صحافی شجاعت بخاری کے لیے ایک تعزیتی ریفرنس منعقد ہوا جس میں مشترکہ قرار دادپیش کی گئی ۔

قرارداد میں برطانوی پارلیمنٹ اورصحافتی حلقوں سمیت عالمی سطح پر بھارتی جارحیت اورشجاعت بخاری کے قتل کےخلاف آواز بلند کرنے کا فیصلہ بھی کیا گیا .

تعزیتی اجلاس میں مقبوضہ کشمیر میں بھارتی ریاستی دہشتگردی میں شہید ہونےوالے کشمیری جوانوں اورشہید صحافت سید شجاعت بخاری کے ایصال ثواب کےلئے فاتحہ خوانی بھی کی گئی

اجلاس میں شجاعت بخاری کے بہیمانہ قتل کی مذمت کی گئی اور اسے بھارت کی جانب سے کشمیریوں کی نسل کشی کا تسلسل قرار دیا گیا ۔شرکاء کانفرنس نے مطالبہ کیا کہ شجاعت بخاری کے قتل کی تحقیقات کیلئے حکومت پاکستان اقوام متحدہ کی تنظیم ہیومین رائٹس کمیشن کے سامنے اُٹھانے میں دیر نہ کرے ۔ تعزیتی ریفرنس میں مقبوضہ اور آزاد کشمیر کی جماعتوں کےمختلف نمائندوں نے بھی شرکت کی۔

پروفیسر نذیر احمد شال، نذیر احمد قریشی ، پروفیسر محمد عارف، ایوب راٹھور، سید تحسین گیلانی، شبیر ملک، سردار امجد عباسی،مہربان ملک سمیت دیگر معززین نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ شہید شجاعت بخاری نے قلم کی حرمت اور سچائی کو منظر عام پر لانے کےلئے بھارتی جبر و استبداد کی بھی پرواہ نہیں کی۔ کشمیر کی آزادی کے لئے سینہ سپر ہوکر ڈٹے رہے جس کی پاداش میں انہیں قتل کیا گیا.

پروفیسر نزیر احمد شال نے کہا کہ شجاعت بخاری پاکستان اور بھارت کے درمیان ٹریک ٹو ڈپلومیسی کا حصہ تھے جبکہ انہوں نے کئی انٹرنیشنل یونیورسٹیوں میں لیکچرز بھی دئیے ۔14 جون کو کشمیر اقوام متحدہ کی رپورٹ کے منظر عام پر آنے اور اس کو کاونٹر کرنے کے لئے شجاعت بخاری کا قتل کیا گیا ۔

اس موقع پر مختلف زرائع ابلاغ سے منسلک نمائندوں اور صحافیوں نے اعادہ کیا کہ شجاعت بخاری کے قتل کےخلاف برطانیہ میں بڑے پیمانے پر ممبرانِ پارلیمنٹ اور صحافیوں کی تنظیموں کے پلیٹ فارموں پر اٹھایا جائے گا۔

پاکستان انٹرنیشنل ہیومن رائٹس آرگنائزیشن کے یوکے میں صدر شیراز خان، مسرت اقبال، لائق علی خان، صفدر بخاری، اسرار خان، احتشام الحق قریشی، جمیل منہاس، منصف چوھدری، اسرار راجہ نے یہ تجدید عہد کیا کہ شجاعت بخاری کے مشن کو جاری رکھا جائے گا

اس موقع پر جموں و کشمیر ہیومین رائٹس کمیشن کے چیئرمین راجہ شبیر، صدیق راٹھور، سابق ڈپٹی مئیر فاضل ضیاء آزاد نکیالوی، سرار ظہور اور دیگر نے بھی اظہارِ خیال کرتے ہوئے کشمیر میں بھارتی ظلم اور بربریت کی مذمت کی