جرمنی میں ایرانی سفارتکار سنگین ترین جرم میںگرفتار؟

برلن(ویب ڈیسک ) جرمن پولیس نے حزب اختلاف سے تعلق رکھنے والے ایرانی سیاستدانوں کو بم دھماکے میں ہلاک کرنے کی مبینہ منصوبہ بندی کرنے پر ایرانی سفارتکار کو حراست میں لیا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ اسد الہ اے آسٹریا کے دارالحکومت ویانا میں ایرانی سفارت خانے میں تعینات ہے۔ ادھر آسٹریا نے ایرانی سفارتکار کو حاصل سفارتی استثنیٰ ختم کرنے کا عندیہ دیدیا۔ قبل ازیں بلجیم کی شہریت رکھنے والے جوڑے کو اسی الزام کے تحت برسلز سے گرفتار کیا گیا ہے۔

دوسری جانب ایرانی وزارت خارجہ کے ترجمان بہرام قاسمی نے میڈیا کو بتایا کہ ایران کے پاس یہ شواہد موجود ہیں کہ اس حملے کی منصوبہ بندی میں دہشت گرد تنظیم ملوث ہے۔ ایران کی قومی مزاحمتی کجونسل کا کہنا ہے کہ جرمنی میں گرفتار سفارت کار ویانا میں انٹیلی جنس یونٹ کے سربراہ ہیں۔

دوسری جانب ایرانی حکومت کا کہنا ہے کہ گروہ کے اراکین خود اپنے خلاف حملے کی منصوبہ بندی کا ڈرامارچا رہے ہیں تاکہ ایران کو بد نام کیا جاسکے اور اس کا جوہری معاہدہ ختم ہو جائے۔