بیگم کلثوم نواز آہوں اورسسکیوں میں سپرد خاک، ہزاروں افراد کی شرکت

لاہور (سٹیٹ ویوز) بیگم کلثوم نواز کی نماز جنازہ اداکردی ، آہوں اورسسکیوں میں سپرد خاک کردیا۔، نماز جنازہ اداکردی جس کے بعد جاتی امرا میں شریف فیملی کےآبائی قبرستان میں دفن کردیا۔

تفصیلات کے مطابق سابق وزیراعظم نواز شریف کی اہلیہ بیگم کلثوم نواز کو آہوں اورسسکیوں میں سپرد خاک کردیا ۔ جبکہ جنازے میں آزادکشمیر سمیت ملک بھر سے ہزاروں افراد نے شرکت کی ۔

اس موقع پر سیکیورٹی کےبھی فول پروف انتظامات کیے گئے۔نمازجنازہ کے لئے شریف میڈیکل سٹی گراؤنڈ میں صف بندی کیلئے لائنیں لگائی گئیں تھیں۔ جبکہ جنازہ گاہ کو 2حصوں میں تقسیم کیا گیا ہے ، ایک حصے وی آئی پیز کے لئے مختص ہیں۔

بیگم کلثوم نواز کو جاتی امرامیں شریف فیملی کےآبائی قبرستان میں دفن کیا گیا۔ بیگم کلثوم نواز کی نماز جنازہ جاتی امرا کے شریف میڈیکل سٹی میں ادا کی گئی، نماز جنازہ معروف عالم دین مولانا طارق جمیل نے پڑھائی۔

نواز شریف کے والد اور بھائی بھی اسی میڈیکل سٹی میں مدفون ہیں۔دوسری جانب بیگم کلثوم نوازکی نمازہ جنازہ کیلئے پولیس نے سیکیورٹی پلان ترتیب دیا گیا، 4 ایس پیز، 6 ڈی ایس پیز اور 17 ایس ایچ اوز فرائض انجام دیں گے جبکہ 800 سے زائد اہلکار بھی تعینات رہے۔، جنازے کے شرکا کی پارکنگ کےانتظامات کیےگئےہیں، ڈیوٹی پر مامور اہلکاروں کو چیکنگ کے بعد جنازےمیں شرکت کی اجازت دی گئی۔

یاد رہے آج صبح کلثوم نواز کی میت کو پی آئی اے کی پرواز پی کے 758 کے ذریعے لندن سے علامہ اقبال انٹرنیشنل ایئر پورٹ پہنچایا گیا، میت لے کر شریف خاندان کے تیرہ افرادلاہور پہنچے۔جن میں شہباز شریف،حسین نواز کےدونوں بیٹے،کلثوم نوازکی بیٹی اسماء ڈار، حلیمہ ڈار اور عثمان ڈار شامل تھےجبکہ حسین نوازاورحسن نوازپاکستان نہیں آئے۔

بیگم کلثوم نوازکی میت کو ایئرپورٹ سے جاتی امرامنتقل کرکے شریف میڈیکل سٹی کے سرد خانے میں رکھآ گیاتھا۔خیال رہے اڈیالہ جیل میں قید کاٹنے والے سابق وزیرِ اعظم نواز شریف کی، اہلیہ کی آخری رسومات کی ادائیگی کے لیے پیرول پر رہائی میں 17 ستمبر تک توسیع کر دی گئی۔

واضح رہے سابق وزیراعظم نواز شریف کی اہلیہ بیگم کلثوم نواز طویل عرصہ برطانیہ میں زیرِ علاج رہنےکے بعد انتقال کرگئیں ، وہ طویل عرصے سے گلے کے سرطان میں مبتلا تھیں۔