وزیراعظم پاکستان عمران خان اوروزیراعظم آزادکشمیرراجہ فاروق حیدرخان کی ملاقات کی اندرکی کہانی

سعید الرحمن صدیقی

وزیر اعظم پاکستان عمران خان اور وزیر اعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر خان کی ملاقات انتہائی دلچسپ اور حیران کن رہی گوکہ وزیر اعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر خان نے عمران خان کے وزیر اعظم پاکستان بننے سے پہلے کے بیانات کافی سخت تھے جبکہ عمران خان نے بھی راجہ فاروق حیدر خان کے خلاف سخت بیانات دئیے تھے لیکن وزیر اعظم پاکستان بننے کے بعد آزاد کشمیر کے وزیراعظم راجہ فاروق حیدر خان سے جو عمران خان کی ملاقات ہوئی اس میں آزاد کشمیر کے مسائل کے علاوہ شکار سے لیکر فاروق حیدر خان کی ذات تک دلچسپ جملوں کا تبادلہ ہوا.

عمران خان نے کہا کہ میں نے اپ کی پروفائل پڑھی ہے آپ میری طرح حق گو اور بغیر لگی لپٹی کہ بات کرتے ہیں عمران خان نے آزاد کشمیر کی تعلیم کے محمکہ میں میرٹ کی شروعات کی بھی تعریف کی اور کہا کہ یہ اچھا اقدام ہے اسکو بتدریج باقی محکموں تک بھی لیکر جائیں فاروق حیدر نے زلزلہ متاثرین کے پچپن ارب روپے کی بات کی تو عمران خان نے کہا کہ اس حوالے سے ایرا سے بات کی جائیگی جس پر فاروق حیدر نے کہا کہ ہمیں ایرا کے ذمے نہ کریں بلکہ وفاق ہمیں خود یہ پیسے دے ہماری ضرورت ہے اور ہمارے بہت سے منصوبے ابھی زیر تکمیل ہیں.

نیلم جہلم پر جب فاروق حیدر نے بات شروع کی تو شروع میں ہی فاروق حیدر نے کہا کہ آپ نے دریائے نیلم دیکھا تھا ؟ عمران خان نے جواب دیا ہاں بہت خوبصورت دریا ہے جس پر فاروق حیدر نے کہا کہ وہ اب نالہ بن چکا ہے واپڈا نے گو کہ ہمیں فراخ دلی سے فنڈز دئیے ہیں لیکن ابھی بہت سے منصوبہ جات کے لئے ہمیں فنڈز مزید درکار ہیں فاروق حیدر نے تجویز دیتے ہوئے کہا کہ آپ واپڈا اور ہمیں اپنی صدارت میں بٹھائیں اور اس معاملے کو آپ خود حل کریں جس پر عمران خان نے کہا کہ وہ چئیرمین واپڈا کو بلا کر نیلم جہلم پر بریفنگ لیں گے اور آزاد کشمیر حکومت کی شکایات کا ازالہ کریں گے.

آئینی ترامیم پر فاروق حیدر نے مزید کچھ تجاویز جس میں مالیاتی اختیار کی بات تھی عمران خان کو پیش کی وزیراعظم آزادکشمیر نے جب یہ بتایا کہ وہ اپنے ذاتی گھر میں رہتے ہیں اور 70کروڑ سے بننے والے گھر کو نہیں استعمال کررہے تو اس پر مسرت کا اظہار کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ میں بھی یہی کہتا ہوں کہ سادگی اختیارکی جانی چاہیے.

آزادکشمیر حکومت کے بارے میں جب فاروق حیدر نے کہا کہ آپ کا شکریہ آپ نےخلاف روایت کسی سازش کی حوصلہ افزائی نہیں کی تو عمران خان نے کہا کہ آپ جائیں کام کریں ہمیں آپ سے کوئی مسئلہ نہیں ہم نہیں چاہتے کوئی کرپٹ آپ کو replace کرے۔ فاروق حیدر نے عمران خان کو دورہ آزاد کشمیر کی بھی دعوت دی جو عمران خان نے قبول کرتے ہوئے کہا کہ وہ جلد آزاد کشمیر آئیں گے فاروق حیدر نے کہا کہ سیاسی مخالفت اپنی جگہ لیکن اب آپ چونکہ وزیر اعظم پاکستان ہیں لہذا اپ کے منصب کا احترام اور آپکی تکریم میرا فرض ہے میری محبت پاکستان اور اسکی حکومت کیساتھ بے لوث ہے عمران خان نے انتہائی گرم جوشی سے فاروق حیدر کا استقبال اور الوداع کیا.

ویڈیو دیکھیں: