پیغام جناب راجہ محمد فاروق حیدرخان وزیراعظم آزادحکومت ریاست جموں وکشمیر

بسم اللہ الرحمان الرحیم

آج ریاست بھر کے عوام ،مہاجرین مقیم پاکستان اور دنیا بھر میں بسنے والے کشمیری آزاد جموں وکشمیر کا 71واں یوم تاسیس منا رہے ہیں۔ میں اس موقع پر ساری ملت کو دل کی اتھاہ گہرائیوں سے مبارکباد پیش کرتا ہوں ۔

برداران ملت : آزاد جموں وکشمیر کا قیام محض اتفاق نہیں تھا بلکہ اس کیلئے ریاست جموں وکشمیر کے مسلمانوں نے تاریخ ساز جدوجہد کی تھی ۔19جولائی1947کو سرینگر کے مقام پر ریاستی مسلمانوں نے الحا ق پاکستان کی قرارداد منظور کر کے اپنا مستقبل پاکستان کے ساتھ وابستہ کرنے کا فیصلہ کر لیا تھا۔ جب وہ یہ فیصلہ کر چکے توا نہیں اس بات کا احساس بھی ہوگیا تھا کہ تقسیم برصغیر کے اصولوں کے مطابق ریاست کے مسلمانوں کو اپنے مستقبل کا فیصلہ کرنے کا موقع فراہم نہیں کیا جارہا اور ایک سازش کے ذریعے ریاست جموں وکشمیر کو بھارت کاحصہ بنایا جارہا ہے ۔چنانچہ انہوں نے ڈوگرہ راج کے خلاف اعلان جہاد آزادی کر کے قرارداد الحاق پاکستان کو عملی شکل دینے کیلئے اپنی جدوجہد کا آغاز کیا اور15ماہ تک مسلسل بھارتی افواج کا بھرپور مقابلہ کر کے کشمیر کے ایک حصے کو ڈوگرہ فوج اور بھارتی تسلط سے آزاد کر آج ہی کے دن ایک انقلابی حکومت قائم کر دی ۔

پاکستان کی حکومت اور عوام کشمیریوں کیلئے جو سیاسی ،اخلاقی اور سفارتی حمایت جاری رکھے ہوئے ہیں اس سے تحریک آزادی کو تقویت ملی ہے ۔ مجید وانی سے لیکر برہان وانی اور حال ہی میں شہید ہونے والے ڈاکٹر منان وانی سمیت کشمیر کے بہادر بیٹوں نے سبز ہلالی پرچم کیلئے لہو کا جو نذرانہ دیا ہے دنیا کی تاریخ میں اس کی کوئی مثال نہیں ملتی ہے ۔ بھارت نے گزشتہ71سالوں کے دوران کشمیری عوام کو اپنی باربار کی یقین دہانیوں کے باوجود اقوام متحدہ کی قراردادوں پر عملدرآمد کیلئے کوئی اقدامات نہیں کیے ہیں ۔اس نے پوری وادی کو ایک فوجی کالونی بنارکھا ہے جہاں ظلم و بربریت کی انتہاء کر دی گئی ہے انسانی حقوق کی بد ترین خلاف ورزیوں ، کشمیریوں کو گاجر مولی کی طرح کاٹنے کے عمل نے کشمیری عوام کو اس بات پر مجبور کیا کہ وہ جدوجہد آزادی میں مزید تیزی لائیں چنانچہ اس وقت کشمیر کے عوا م آگ و خون کا دریا عبور کرتے ہوئے آزادی کی جدوجہد کو جاری رکھے ہوئے ہیں ۔

اس تحریک کے دوران انہوں نے قربانیوں کی جو عظیم داستان رقم کی ہے وہ ناقابل بیان ہے ۔ انہوں نے اپنی بے مثل قربانیوں سے یہ ثابت کر دیا ہے کہ وہ حق خودارادیت کے حصول تک اپنی جدوجہد جاری رکھیں گے ۔ آزادکشمیر میں مسلم لیگ ن کی حکومت تحریک آزادی کے اس اہم موڑ پر اپنا اہم کردار ادا کررہی ہے ۔ مسئلہ کشمیر کو عالمی سطح پر اجاگر کرنے اور اس مسئلہ پر زیادہ سے زیادہ عالمی حمایت حاصل کرنے کیلئے بین الاقوامی سطح پر کوششیں تیز کر دی گئی ہیں ۔ انشاء اللہ وہ دن دور نہیں جب مقبوضہ کشمیر کے عوا م بھارتی تسلط سے آزاد ہو کر پاکستان کے ساتھ الحا ق کرینگے اور ہم اپنے آباء کے الحاق پاکستان کے عزم کو عملی جامع پہنائیں گے ۔ میں اس موقع پر مقبوضہ کشمیر کے غیور عوام کی ہمت ، استقامت اور جذبہ حب الوطنی پر خراج تحسین پیش کرتا ہوں ۔

پاکستان پائندہ باد ، آزاد جموں وکشمیر زندہ باد

PAID CONTENT