گلگت کے تمام ہوٹلز میں گیس اور کیروسین ہیٹرز کے استعمال پر پابندی

گلگت بلتستان(سٹیٹ ویوز) گلگت بلتستان حکومت نےہنزہ کے ایک ہوٹل میں دم گھٹنے سے جوڑے کی ہلاکت کا نوٹس لے لیا،گلگت کےتمام سیاحتی مقامات پر بنے تمام ہوٹلوں میں گیس اور کیروسین ہیٹرز پر پابندی عائد کر دی ۔

تفصیلات کے مطابق دو دن قبل دفترِ خارجہ کی خاتون افسر سیدہ فاطمی اور شوہر کی موت ہنزہ کے ایک ہوٹل میں گیس لیکج کی وجہ سے ہوئی تھی، جس کا نوٹس لیتے ہوئے گلگت بلتستان حکومت نے گیس اور کیروسین ہیٹرز پر پابندی عائد کر دی ہے۔
گیس اور کیروسین ہیٹرز کے استعمال پر پابندی تا حکم ثانی عائد رہے گی۔گلگت بلتستان حکومت کے ترجمان کا کہنا ہے کہ ہوٹلز میں گیس اور کیروسین ہیٹرز کے استعمال پر پابندی تا حکم ثانی عائد کی گئی ہے۔

خیال رہے کہ ہفتے کو دفترِ خارجہ میں اسسٹنٹ ڈائریکٹر کے عہدے پر تعینات خاتون افسر سیدہ فاطمی ہنزہ کے ایک ہوٹل کے کمرے میں اپنے شوہر سید شعیب حسن سمیت مردہ پائی گئیں تھیں۔سیدہ فاطمی 10 دن قبل ہی فرانس سے تربیت مکمل کر کے پاکستان پہنچی تھیں جب کہ ان کی شادی 29 نومبر کو ہوئی اور اپنے شوہر کے ساتھ ہنزہ گئی تھیں۔

وزیرِ خارجہ نے مرحومہ کے لواحقین سے تعزیت کا اظہار اور مرحومین کے لیے دعائے مغفرت کرتے ہوئے ٹویٹر پر اپنے پیغام میں کہا تھا ’مجھے دفترِ خارجہ کی ایک نوجوان خاتون افسر کی شوہر سمیت دردناک موت پر گہرا دکھ ہوا، فارن آفس نے ایک ذہین افسر کھویا ہے۔