پیپلز پارٹی گلگت بلتستان بھی چیئرمین بلاول بھٹو اور دیگر قائدین کیلیے میدان میں آگئی

گلگت (سٹیٹ ویوز) پیپلز پارٹی گلگت بلتستان کے صوبائی صدر امجد ایڈوکیٹ ,سینئر نائب صدر جمیل احمد، جنرل سکریٹری انجینئر اسماعیل اور سکریٹری اطلاعات سعدیہ دانش نے کہا ہے کہ پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو اور دیگر قائدین کے نام ای سی ایل میں ڈال کر وفاقی حکومت نے بزدلی کا مظاہرہ کیا ہے۔

اس طرح کے اوچھے ہتھکنڈوں سے حکومت کی بوکھلاہٹ اور حواس باختگی کا اندازہ ہو رہا ہے۔تحریک انصاف دراصل تحریک انتقام بن چکی ہے۔بنی گالہ میں غیر قانونی طور پر تعمیر شدہ گھر کا مالک وزیراعظم کے منہ سے احتساب کی باتیں اس صدی کا سب سے بڑا لطیفہ ہیں۔اگر ای سی ایل میں نام ڈالنے ہیں تو پھر وزیر اعظم عمران خان، علیمہ خان، جہانگیر ترین اور پرویز خٹک سمیت ان وزراء کے نام بھی ای سی ایل میں ڈال دئے جائیں جن پر احتساب عدالت میں کیس چل رہے ہیں۔

بلاول بھٹو نے گلگت بلتستان کے چھے روزہ دورے میں جس طرح یہاں کے حقوق کی بات کی اور کل بے نظیر بھٹو شہید کی برسی کے موقع پر گلگت بلتستان سے متعلق جس طرح سے دوٹوک موقف دیا اس سے وفاقی حکومت مکمل طور پر حواس باختہ ہوچکی ہے۔گلگت بلتستان کے عوام باشعور ہیں وہ اپنے محسن اور لیڈر کا ساتھ دینا جانتے ہیں اور عمران خان نے بھٹو خاندان کے خلاف جو طبل جنگ بجایا ہے کراچی کے ساحلوں سے خنجراب کے ٹاپ تک اسکا منہ توڑ جواب آئے گا۔

عمران خان نے جس طرح گلگت بلتستان کے حقوق کو کشمیر کے تنازعے سے جوڑا اسکی بھرپور مزمت کرتے ہیں۔استصواب رائے کا گلگت بلتستان کے حقوق سے کوئی تعلق نہیں ہے۔گلگت بلتستان کے عوام اس کا جواب حکومت وقت کو ضرور دیں گے۔