انسداد دہشت گردی عدالت باغ نے 4مجرمان کو سزا سنا دی

باغ آزادکشمیر ( طاہر احمد عباسی /سٹیٹ ویوز) انسداد دہشت گردی عدالت باغ نے 4مجرمان کو 7,7 سال قید کی سزا سنا دی۔ انسداد دہشت گردی عدالت ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج باغ راجہ فیصل مجید خان پر مشتمل تھی۔

عدالت میں دیرینہ مقدمہ کا فیصلہ سنا تے ہوئے 4ملزمان افتخار مجید ولد عبد المجید ساکن بلوچ اعوا ن آباد، شیزان رشید ولد عبد الرشید ساکن پلندری، مولوی عبد الخالق ولد سعید الرحمان ساکن کوٹ کوئیاں عباسپور ، حافظ کاشف حنیف ولد محمد حنیف ساکن سیسر داتوٹ کو جرم ثابت ہونے پرExplosive Substances Act 1908کی دفعہ 4اور 109/APCآزاد کشمیر پینل کوڈ کے تحت 7,7 سال قید کی سزا سنا دی۔

مجرمان کو دفعہ 362 مجموعہ ضابطہ فوجداری کا استعفادہ بھی دیا گیا ۔ مجرمان قید کی سزا ڈسٹرکٹ جیل راولاکوٹ میں گزاریں گے۔ جبکہ اس مقدمہ میں تحریک طالبان پاکستان کے عصمت اللہ معاویہ بھی مطلوب تھے جن کے دائمی وارنٹ گرفتاری جاری کر دئیے گئے ہیں ۔

تفصیلات کے مطابق مورخہ 13ستمبر 2010 کو باغ کے مشہور تجارتی مرکز حیدری چوک میں ایک دکان کے باہر 8 کلو وزنی دستی بم پریشر ککر میں نصب کیا گیا تھا جس پر تفتیش کے بعد تحریک طالبان پاکستان کے عصمت اللہ معاویہ سمیت 15ملزمان کو چالان عدالت کیا گیا تھا۔

مقدمہ آزاد کشمیر کے مختلف اضلاع میر پور ، مظفرآباد کی عدالتوں سے منتقل ہو کر باغ انسداد دہشت گردی عدالت میں زیر کار تھا جس کا گزشتہ روز فیصلہ سنا دیا گیا۔ سزا پانے والے چاروں مجرمان کو ڈسٹرکٹ جیل راولاکوٹ منتقل کر دیا گیا ہے۔