جعلی مینڈیٹ نہیں مانتا،گو نورین گو تحریک شروع کررہے ہیں،خورشید عباسی

پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی رہنماء و سابق امیدوار اسمبلی حلقہ کوٹلہ خورشید احمد عباسی نے حلقہ کوٹلہ میں این۔ٹی۔ایس(NTS) کی خلاف ورزیوں،خلاف میرٹ تقرریوں اور ٹھیکوں سکیموں کی بندر بانٹ کےخلاف تحریک چلانے کا اعلان کر دیا۔

رواں ہفتے ایم۔ایل۔اے کوٹلہ اور وزیر حکومت نورین عارف کے خلاف وائٹ پیپر جاری کریں گے اور اگلے ہفتے کوٹلہ سے مظفرآباد اسمبلی سیکرٹریٹ تک لانگ مارچ کا اعلان۔ سابق امیدوار اسمبلی حلقہ کوٹلہ خورشید احمد عباسی نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ کوٹلہ سے تمام اپوزیشن نمائندوں کو ایک پیج پر لائیں گے .

گو نورین گو تحریک شروع کر رہے ہیں جعلی مینڈیٹ کو نہیں مانتا، دھاندلی کی پیداوار حکومت نے نظام تباہ کر دیا ۔سیکرٹری تعلیم اور ڈی۔ای۔او کو وارنگ دے رہا ہے نورین عارف کے چمچوں کے کہنے پر غیر قانونی کام نہ کریں ورنہ دما دم مست کلندر ہو گا سب کو عدالت لے کر جاوں گا ۔ریڈیو کا سرکاری ملازم اورنورین عارف کا پی۔آر۔او ان کی ایماء پررشوت لے کر محکمہ تعلیم میں خلاف تقرریاں کرواتا ہے سب کو عوام کے سامنے نے نقاب کیا جائے گا۔

این۔ٹی۔ایس(NTS) کی خلاف ورزیوں پر وزیر تعلیم سکولز افتخار گیلانی نوٹس لیں ان کے میرٹ کے دعوے کہا گئے یا عوام کو بتائیں کہ وہ بھی اس کرپشن میں ملوث ہیں۔حلقہ کوٹلہ میں پچھلے تین سال میں تین درجن سے زیادہ خلاف میرٹ تقرریاں ہوئی ۔غیرقانونی طور پر بھرتی ہونے والوں اور والیوں کی لسٹ موجود ہیں ثبوت کے ساتھ وائٹ پیپر میں شامل کریں گے..

عوام کو بنائیں گے کہ کس کس کو غیرقانونی طور پر نوازا گیا ۔حلقہ کے غریب عوام اور تحریک انصاف کے کارکنوں کیساتھ زیادتیاں برداشت نہیں کر سکتا ۔وقت آ گیا ہے کہ جاندار اپوزیشن کا کردار ادا کیا جائے۔وائٹ پیپر جاری کرونگا تو عوام کو پتا چلے گا کہ جعلی مینڈیٹ والے کس طرح وسائل لوٹ رہے ہیں۔

پی۔ٹی۔آئی کی حکومت آئے گی تو سب جعلی تقریاں منسوخ کریں گے۔ ابھی عدالت سے رجوع کر لیا ہے ۔حکومتی وزیر خود برملا اظہار کر رہے ہیں کہ حکومت خود گندے بیورکریٹس کو آگے لا کر میرٹ کا جنازہ نکال رہی ہے آزاد کشمیر میں بھی احتساب کا عمل شروع ہونا چاہیے نیب کا دائرہ کار آزاد کشمیر تک بڑھایا جائے وزیر امور کشمیر کو خط لکھا ہے کہ خطہ کے لوگوں کو نواز لیگ کے ڈاکوں سے بچایا جائے۔