state views

وزیر اعظم کا گیس کے بلوں پر نوٹس عوام کو خوشخبری سنادی

کوئٹہ(مانیٹرنگ ڈیسک ) تحریک انصاف کی حکومت ملک میں نئی تاریخ رقم کررہی ہے۔ پنجاب کے سینئر وزیر کی گرفتاری پر واویلا نہیں کیا جارہا ہے۔ نیب کا حق ہے وہ ہر ایک سے پوچھ گچھ کرسکتا ہے۔ حقائق جلد عوام کے سامنے آئینگے۔ وزیراعظم عمران خان بلوچستان کے ساتھ مخلص ہے بلوچستان میں ترقی کے لئے وزیراعلیٰ بلوچستان کے ساتھ مسلسل رابطے میں ہیں۔یہ بات ڈپٹی اسپیکر قومی اسمبلی قاسم خان سوری نے کوئٹہ چیمبر آف کامرس کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔

انہوں نے کہا کہ اقتصادی حوالے سے سابق حکومت نے کچھ نہیں کیا۔ وزیراعظم اور دیگر وزراء نے دن رات ایک کیا ہے کہ ملک میں جلد معاشی بحران کو ختم کرکے عوام کو سہولیات فراہم کریں۔ بلوچستان کی ابتر صورتحال کی سابقہ حکومتیں ذمہ دار ہے۔ رقبے کے لحاظ سے ملک کا سب سے بڑا صوبہ پسماندگی کا شکار ہے روزگار کے مواقع دیگر صوبوں کے مقابلے میں نہ ہونے کے برابر ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہماری حکومت اس صوبے کو ترقی دے گی اور ہمارا وژن ہے کہ جو علاقے پسماندہ ہے ان پر توجہ دینے دینگے۔ انہوں نے کہا کہ بلوچستان میں اکنامک زون ضروری ہے-

تاکہ یہاں کے لوگوں کو روزگار ملے۔ یہاں کے لوگوں کے پاس پیسے ہیں لیکن انڈسٹری کے مواقع نہ ہونے کی وجہ سے یہاں لوگ پیسہ نہیں لگا سکتے ۔ موجودہ حکومت کی ترجیح ہے کہ بلوچستان میں انڈسٹری لگائیں اور یہاں کے عوام کو سہولیات دیں۔ گیس کے زیادہ بلوں کا نوٹس وزیراعظم نے لے لیا ہے جس پر عوام کو جلد خوشخبری مل جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ کوئٹہ شہر میں گیس پریشر کی کمی کی وجہ کوئٹہ قلات پائپ لائن کا ایک ہونا ہے جس پر کافی بوجھ ہے اس کو بھی وفاقی حکومت وسعت دے گی۔

اس سلسلے میں کوئٹہ اور قلات کی پائپ لائنیں الگ کردی جائے گی۔ قاسم خان سوری نے کہا کہ یہاں کے تاجروں کے جو خدشات ہے اس پر جلد متعلقہ وزراء سے بات کروں گا۔ انہوں نے کہا کہ بجلی کی لوڈ شیڈنگ سے زیادہ تر ہمارا زرعی شعبہ متاثر ہوا ہے ایک طرف خشک سالی نے ہمارے زراعت کو تباہ کیا ہے دوسری طرف بجلی کی لوڈ شیڈنگ سے ہماری زرعی علاقے صحرا بن گئی ہے۔ تحریک انصاف کی حکومت اس صوبے کی زرعی ٹیوب ویلوں کو سولر سسٹم پر منتقل کررہا ہے تاکہ زراعت کا شعبہ واپس بحال ہوجائے اور لوگوں کو روزگار کے مواقع ملے۔