راجہ ریفاز نے مسلم لیگ پر ظہیرکیانی کےتبصرے کودلچسپ قراردیدیا

جدہ(سٹاف رپورٹر/سٹیٹ ویوز) راجہ ریفاز احمد خان سابق نائب صدر جدہ یونٹ مسلم کانفرنس سعودی عرب نے سابق آفیسرتعلقات عامہ برائے وزیراعظم آزادکشمیرراجہ ظہیر احمدکیانی ایڈووکیٹ کے مسلم لیگ آزادکشمیرمیں موجودہ چپقلش پر دلچسپ تبصرے کو دلچسپ قراردیا جس میں ظہیر کیانی لکھتے ہیں کہ راجہ نصیر کا یہ کہنا کہ سکندر حیات کے پاس سرکاری گاڑی ہے کوئی غلط بات نہیں لیکن راجہ نثار کا یہ کہنا کہ سکندر حیات مجاہد اوّل سمیت کس سے مشاورت کرتے تھے زبردست طنز کیا جو درست نہیں کیونکہ راجہ نثار سکندر حیات کی مرہون منت ہیں لیکن راجہ نصیر جو اپنے ذاتی کردار اور محنت کی وجہ سے ہیں۔

مشتاق منہاس کا یہ کہنا کہ سکندر حیات کو نواز شریف نہیں جانتے یہ مشتاق منہاس ہی بتا سکتے ہیں البتہ سکندر حیات کا یہ کہنا کہ مسلم کانفرنس کو عتیق خان نے توڑا شاہد وہ اپنا نام لینا شرمندگی سمجھتے ہیں کہ انھوں نے وہ کردار عتیق صاحب کے ساتھ ادا نہیں کیا جو مجاہد اوّل سکندر حیات کیلئےادا کرتے رہے۔ فاروق حیدر کی سکندر حیات کےخلاف کرپشن کرنے کی خبریں اگرچہ درست ہیں لیکن اُن کو کہنا نہیں چاہیے کیونکہ سکندر حیات اُن کے گُرو ہیں۔ سکندر حیات کا مسلمُ کانفرنس سے ہاتھ ملانے کے بیان کی حمایت کرتے ہیں۔ سکندر حیات اور اُن کے خاندان کی تاریخ مسلم کانفرنس سے وابستہ ہے اُن کو اپنی جماعت میں واپس آنا چاہیے۔فاروق حیدر کے حمایتیوں کا یہ کہنا کہ سکندر حیات کرپشن کے بانی ہیں درست عمل نہیں کیونکہ یہ لوگ جو ہیں وہ سکندر حیات کی وجہ سے ہیں۔

سکندر حیات کی مجاہد اوّل کے خلاف ہرزہ سرائی قابل مذمت ہے کیونکہ مجاہد اوّل کے احسانات کا بدلہ غیبت۔ جھوٹ اور بہتان تراشی سے نہیں دینا چاہیے۔یہ بہت کم ظرف لوگوں کا طریقہ ہے۔سکندر حیات کا ملک یوسف کو مرغی کا آخری حصہ قرار دینا درست بات نہیں کیونکہ کسی بڑے انسان کو اتنی چھوٹی زبان استعمال نہیں کرنی چاہیے ہاں البتہ ملک نواز کے لیے جوالفاظ سکندر حیات نے کہے وہ درست ہیں لیکن کم ہیں۔ ملک نواز استحکامت کا ہمالیہ اور کے ٹو ہیں۔ آزاد کشمیر میں اُن کی رواداری ۔استحکامت اور ثابت قدمی کی مثال دینا ممکن نہیں۔