میرپور ضلعی فوجداری عدالت نے دوملزمان کوچارمرتبہ سزائے موت اورجرمانہ سنادیا

میرپور( بیورورپورٹ)میرپور ضلعی فوجداری عدالت کا مقدمہ قتل کا تاریخ ساز فیصلہ،حقیقی ماموں کو خاندان سمیت قتل کرنے والے ارسلان ارشد،فیضان مصطفیٰ کو چار چار مرتبہ سزائے موت دس دس لاکھ جرمانہ اور “وی ای ایچ اے “کے تحت مزید دس سال قید بامشقت اور جرمانے کی سزا سنا دی ۔

تفصیلات کے مطابق میرپور کاکڑھا ٹاؤن کے مشہور قتل کیس کا فیصلہ ضلعی فوجداری عدالت میرپور نے ایڈیشنل ضلعی قاضی سرفراز عباسی کی سربراہی میں تاریخ ساز فیصلہ سناتے ہوئے2011ء حقیقی ماموں عبدالحمید اور ان کی بیگم سمیت بیٹے اور بیٹی کو قتل کرنے والے ارسلان ارشد اور فیضان مصطفیٰ کو جرم ثابت ہونے پر 4،4 بار سزائے موت دس دس لاکھ جرمانہ کی سزا سنا دی جبکہ “وی ای ایچ اے” میں مزید دس سال قید با مشقت اور جرمانے کی سزا سنائی گئی ۔

یاد رہے کہ چیف جسٹس آفتاب حسین علوی جوڈیشل ورکنگ پلان کے پر عمل کرتے ہوئے ہر ماہ ایک اور دو قتل کے مقدمات کا فیصلہ سنائے جا رہے ہیں اس اہم اور سفاکانہ قتل کے فیصلے پر عوامی حلقوں نے ضلعی فوجداری عدالت میرپور کے اس فیصلے کو تاریخ ساز قرار دیتے ہوئے ایڈیشنل ضلع قاضی محمد سرفراز عباسی کو مبارکباد پیش کی ہے اور فیصلے پر اس فیصلے پر خوشی کا اظہار کیا ہے۔