state views

برین ٹیومر کے آپریشن کے دوران مریض کی قران کی تلاوت

بھارت (ویب ڈیسک) بھارتی شہر اجمیر کی تاریخ میں پہلی بار برین ٹیومر کے آپریشن کے دوران مریض قرآن پاک پڑھتارہا۔میڈیا رپورٹس کے مطابق برین ٹیومر کے شکار عبدل نامی شخص کی قوت سماعت کم ہوتی جا رہی تھی۔متاثرہ مریض نے نیوروسرجن سوریہ چوہدری سے رابطہ کیا۔جنھوں نے مریض کو بیہوش کیے بغیر اس کا کامیاب آپریشن کیا اور مریض دورانِ آپریشن قرآن پاک پڑھتا رہا۔ڈاکٹر سوریہ کا کہنا تھا کہ حالانکہ سائنس میں اس طرح کے واقعہ کو زیادہ سنجیدہ نہیں مانا جاتا تھا لیکن کہیں نہ کہیں لوگوں میں عقیدت رہتی ہے اور اس سے ہی انسان کو طاقت ملتی ہے۔

واضح رہے اس سے قبل بھی ایک رپورٹ میں بتایا گیا تھا کہ بہاولپور کے ایک چھوٹے سے قصبے سے تعلق رکھنے والے پیر عثمان غنی اب تک دنیا بھر میں لاکھوں افراد کا قرآن پاک سے روحانی علاج کر چکے ہیں جو کہ بلکل کامیاب تھے۔عثمان غنی نے قرآن تھیراپی کو دنیا بھر میں متعارف کروایا۔ ان کا کہنا ہے کہ انہیں 32 سال قبل ایک مجذوب کی جانب سے قرآن پاک کے ذریعے سے علاج کا طریقہ کار عطا کیا گیا تھا۔

جس کے بعد سے اب تک وہ مہلک بیماریوں میں ملوث لاکھوں افراد کا علاج قرآن پاک کی سورتوں کے ذریعے سے کر چکے ہیں۔عثمان غنی نے مزید بتایا کہ قرآن تھیراپی یا قرآن ہیلنگ کے ذریعے سے نہ صرف پاکستان بلکہ مشرق وسطی،یورپ امریکا اور ترکی سمیت کئی ممالک میں افراد کا علاج کر چکے ہیں۔یہ طریقہ انتہائی سادہ اور مکمل طور ہر مفت ہے۔قرآن پاک کا دم کروانے والے افراد کو صرف 5 روپے کا چندہ کسی بھی مسجد میں دینا ہوتاہے۔

جب کہ غیر مسلموں کو یہ رقم اپنی عبادت گاہوں میں دینے کی اجازت دی گئی ہے۔دنیا بھر میں عثمان غنی کے 25ہزار سے زائد شاگرد ہیں جن میں زیادہ تر وہ افراد ہیں جو اس قبل خود کینسر یا کسی مہلک بیماری میں مبتلا تھے اور قرآن تھیراپی سے شفا یاب ہونے کے بعد انہوں نے اپنی خدمات روحانی طریقے سے علاج کروانے کے لیے وقف کر دیں۔

وہ دنیا بھر میں مقدس آیات کے ذریعے سے لوگوں کا علاج کر کے انسانیت کی خدمت کر رہے ہیں۔علاج کا طریقہ کار بتاتے ہوئے عثمان غنی کا کہنا تھا کہ یہ انتہائی سادہ طریقہ ہے جس کے تحت دم کروانے والے کو ہر ہفتے میں 5سے 6منٹ دینے پڑتے ہیں۔عثمان غنی کا کہنا ہے کہ انہوں نے انسانیت کی خدمت کے لیے مسلم اور غیر مسلم میں کوئی فرق نہیں کیا۔جس کے نتیجے میں 89 غیر مسلم قرآن پاک کے معجزے سے متاثر ہو کر دائرہ اسلام میں داخل ہو گئے۔
مزید پڑھیں

صحابی رسول (ص) نےمال و اسباب ہونے کے باوجود صدقہ کرنے سے انکار کیوں‌کیا؟