جعلی پیراوراسکی بیوی شکنجے میں آگئے

راولپنڈی(اسرارراجپوت/سٹیٹ ویوز)سابق وفاقی وزیر داخلہ چوھدری نثار علی کا کزن بن کر خواجہ وقار کی فیملی سے سوا چار کروڑ نقد/دو کلو سونا ٹھگنے والا پیر چوھدری صہیب علی عرف پیرا اپنی بیوی کے ہمراہ بالآخر قانون کے شکنجے میں آ گیا۔

پیر اور اس کی بیوی کے خلاف خواجہ فیملی کو لُوٹنے اور بعد ازاں اس خاندان کی جواں سال لڑکی م-و کی تصاویر بنا کر بلیک میل کرنے کی پاداش میں ایف آئی اے سائیبر کرائم سیل نے مقدمہ درج کر لیا۔

مقدمہ ڈی جی ایف آئی اے بشیر میمن کے ذاتی طور پر نوٹس لینے بعد درج ہوا۔جعلی پیر اور اس کی بیوی نے کورٹ سے 18 مارچ تک عبوری ضمانتیں حاصل کر لیں۔

دوسری طرف ڈی جی ایف آئی نے مظلوم فیملی سے ایک جعلی صحافی فدا اللہ مروت ساتھ ملکر خود کو ڈی جی کا پی اے ظاہر کر کے ڈیڑھ کروڑ رشوت طلب کرنے پر عبداللہ خان چانڈیو کو معطل کردیا۔

واضع رہے ایف آئی اے کے افسر عبداللہ چانڈیو کی فون کالز جس میں وہ مظلوم خاندان سے ڈیڑھ کروڑ رشوت مانگ رہا ہے کے سوشل میڈیا پر لیک ہونے پر ڈی جی نے سخت نوٹس لیا تھا۔

ڈی جی کے حکم پر ایڈیشنل ڈائریکٹر ایف آئی اے عصمت اللہ جونیجو اور ڈی ڈی سائیبر کرائم سیل عمران حیدر نے انکوائری کی اور جعلی پیر کے خلاف مقدمہ درج کیا۔مظلوم خاندان گزشتہ تین سال سے انصاف لیے دھکے کھا رہا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں