Shooter on New Zealand Muslim Views about trump

نیوزی لینڈ مسجد حملہ ،حملہ آور نے ٹرمپ سے متعلق کیا کہا ؟جانیے

کرائسٹ چرچ (مانیٹرنگ ڈیسک ) کارروائی سے قبل حملہ آور نے اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ پر اپنا منشور بھی شئیر کیا جس میں اس حملے کے پس پردہ عزائم اور اپنے مقاصد سے متعلق آگاہ کیا۔حملہ آور نے ٹویٹر پر جاری اپنے عزائم میں بتایا کہ یہ حملہ ان لوگوں کو سبق سکھانے کے لیے کیا گیا ہےجو ہمارے ملک میں آ کر بیٹھ جاتے ہیں۔ میں ان کو بتانا چاہتا ہوں کہ جب تک سفید فام افراد زندہ ہیں یہ لوگ کبھی بھی ہمارے ممالک اور ہماری سرزمین پر قابض نہیں ہو سکتے۔ حملہ آور کا کہنا تھا کہ ہماری سرزمین پر آکر بسنے والے ان لوگوں کی وجہ سے کئی یورپی شہریوں کی جانیں گئیں جس کا بدلہ لینے کے لیے یہ کارروائی کی گئی۔
کرائسٹ چرچ کی رہائشی خاتون ’جِل‘ نے بہادری اور ہمدردی کی ایک ایسی شاندار مثال قائم کر دی

یہ کارروائی اُن یورپی شہریوں کی غلامی کا بدلہ لینے کے لیے کی گئی جن کی زمینیں مسلمانوں نے چھین لیں۔ یہ کارروائی یورپی ممالک میں کی جانے والی ہزاروں دہشتگردی کی کارروائیوں میں یورپی شہریوں کی ہلاکت کا بدلہ لینے کے لیے کی گئی۔ یہ کارروائی ایبا آکر لینڈ کی ہلاکت کا بدلہ لینے کے لیے کی گئی۔ حملہ آور نے مزید لکھا کہ اس کارروائی کا مقصد یورپ کی سرزمین میں گھُسنے والوں کو ختم کرنے اور یورپی ممالک میں امیگریشن کی شرح کم کرنے کے لیے کی گئی۔

حملہ آور نے کہاکہ پہلے وہ کسی اور مسجد کو ٹارگٹ کرنے کا ارادہ رکھتا تھا لیکن پھر اُس نے النور مسجد کو نشانہ بنانے کا ارادہ کیا کیونکہ یہاں ایسے لوگوں کی تعداد کہیں زیادہ تھی جنہیں وہ مارنا چاہتا تھا۔ حملہ آور کے مطابق وہ ڈونلڈ ٹرمپ سے کافی متاثر تھا۔ اُس نے کہا کہ میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی پُر جوش حامی اور سیاسی طور پر سرگرم خاتون کینڈس اونس سے بھی کافی متاثر ہے۔ طور پر سرگرم خاتون کینڈس اونس سے بھی کافی متاثر ہے۔
مزید پڑھیں

نیوزی لینڈ مسجد پر حملہ کرنے والوں‌کے بارے میں اہم انکشافات

اپنا تبصرہ بھیجیں