بھارت کیجانب سے ایل او سی ٹریڈ بندکرنےپرسہیل شجاع مجاہد برہم

میرپور (سٹیٹ ویوز) صدر چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری میرپور آزاد کشمیر و جوائنٹ صدر چیمبر آف کامرس جموں وکشمیر سہیل شجاع مجاہد نے کہا ہے کہ ایل او سی ٹریڈ کو بند کرتے ہوئے انڈیا کی جانب سے پاکستان پر سنگین قسم کے جھوٹے من گھرٹ الزامات لگانے پر چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری اور آزادکشمیر بھر کی تاجر برادری بھرپور مذمت کرتے ہوئے ان الزامات کو مسترد کرتے ہیں ۔ایسے اقدامات سے انڈیا کی جمہوری ملک ہونے کا پول کھل کر سامنے آ گیا انہوں نے یک طرفہ طور پر ایل او سی کی تجارت کو بند کر دیا جس سے آر پار کے تاجروں کا کروڑوں کا نقصان ہو گا سامان سے بھرے ہوئے ٹرک ایل او سی پر روکے ہیں سامان خراب ہو رہے ہیں 280تاجر جو اس وقت باقاعدہ کام کر رہے ہیں اور اب تک 6900کروڑ کا کاروبار کر چکے ہیں اسی تجارت کو بغیر ٹائم دیتے ہوئے ایک دم بند کر دینا بہت بڑی زیادتی ہے اور انڈیا کی اس کاروائی سے سینکڑوں خاندان بے روزگار ہو گئے ہیں ۔یہ تجارت اعتماد سازی کے اقدامات اور امن کی سہولتیں انڈیا اور پاکستان کے درمیان پیدا کرنے کے لیے ایل او سی ٹریڈ کا آغاز کیا گیا تھا ہم انڈیا کی حکومت سے کہتے ہیں کہ من گھڑت اور جھوٹے الزامات لگانے کے بجائے دو طرفہ اس تجارت کے لیے موثر اور فعال اقدامات اٹھائے جس سے یہ تجارت جاری رہے اور اس میں شریک تاجروں کا نقصان نہ ہو اور ساتھ ہم پاکستان کی حکومت سے بھی مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ اس میں اپنا رول ادا کریں تا کہ یہ تجارت جاری رہ سکے ۔سہیل شجاع مجاہد نے مزید کہا کہ ہم اس موقع پر ایل او سی کے تاجر وں کے تمام مطالبات کی حمایت کرتے ہیں اور ان کے ساتھ کھڑے ہیں ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں