بجلی کی فی یونٹ قیمت میں 4پیسے کمی کا فیصلہ

اسلام آباد(سٹیٹ ویوز) نیپرا نے مارچ کی ماہانہ فیول ایڈجسمنٹ کیلئے چارپیسے فی یونٹ کمی کا فیصلہ کرلیا۔تفصیلات کے مطابق نیپرا نے بجلی کے نرخوں میں چار پیسے فی یونٹ کمی کی منظوری دےدی ہے جس سے صارفین کو اٹھائیس کروڑ روپے کا فائدہ پہنچے گا۔

سی پی پی اے نے مارچ کی ماہانہ فیول ایڈجسمنٹ میں پندرہ پیسے فی یونٹ اضافہ کیلئے نیپرا کو درخواست دی تھی۔سی پی پی اے کے مطابق مارچ میں کوئلے سے بجلی کی پیداوار لاگت چھ روپےستانوے پیسے، فرنس آئل سے بجلی کی پیداواری لاگت گیارہ روپے پینتیس پیسے فی یونٹ رہی۔

گیس سے پیداواری لاگت پانچ روپے چھیتر پیسے، ایل این جی سے نو روپے چوراسی پیسے فی یونٹ رہی جبکہ نیوکلیئر بجلی کی پیداوار لاگت ایک روپیہ ایک پیسہ فی یونٹ رہی۔سی پی پی اے کے مطابق مارچ کے لیے بجلی کی ریفرنس پرائس چار روپے ننانوے پیسے فی یونٹ مقرر کی گئی، ریفرنس پرائس کے مقابلے میں پیداواری لاگت پانچ روپے پندرہ پیسے فی یونٹ رہی ۔

نیپرا حکام کے مطابق سی پی پی اے نے کچھ نجی پاور پلانٹس کی زیادہ لاگت دی جس کے باعث زیادہ لاگت والی درخواست کو مسترد کردیا گیا ہے۔ نیپرا حکام کا کہنا ہے کہ این ٹی ڈی سی کے نقصانات مقرر کردہ حد سے زیادہ تھے۔ این ٹی ڈی سی کے دو عشاریہ آٹھ فیصد سے زیادہ کے نقصانات کو شامل نہیں کیاگیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں