سندھ: پڈعیدن پریس کلب پر حملہ، صحافی جان کی بازی ہارگیا

دادو(نیوزڈیسک) سندھ کے علاقے نوشہروفیروز میں پڈ عیدن پریس کلب پر ہونے والے حملے میں ایک صحافی ہلاک ہوگیا۔

سینئر سپرنٹنڈنٹ پولیس (ایس ایس پی) نوشہروفیروز طارق ولایت نے صحافی علی شیر راجپر کی ہلاکت کی تصدیق کی، ان کا تعلق سندھی روزنامے عوامی آواز سے تھا۔اس کے علاوہ مقتول مقامی پریس کلب کے عہدیدار بھی تھے۔

پولیس افسر نے بتایا کہ لاش کو پوسٹ مارٹم کے لیے مقامی ہسپتال منتقل کردیا گیا۔ان کا کہنا تھا کہ فوری طور پر صحافی کے قتل کے محرکات کے حوالے سے معلومات نہیں مل سکیں۔

ایس ایس پی کا کہنا تھا کہ حملہ آور واقعے کے بعد فرار ہونے میں کامیاب ہوگیا تھا جسے بعد ازاں نوشہروفیروز پولیس نے گرفتار کرلیا۔

واضح رہے کہ صحافیوں کے تحفظ اور ان پر ہونے والے تشدد و غیر قانونی کیسز کی نگرانی کرنے والے ادارے ’پاکستان پریس فاؤنڈیشن‘ (پی پی ایف) کی ایک رپورٹ کے مطابق پاکستان بھر میں 2002 سے لے کر اپریل 2019 تک صحافیوں کے قتل، تشدد اغوا اور اسی طرح کے دیگر 699 واقعات ہوئے۔

رپورٹ کے مطابق پاکستان میں گزشتہ 18 برس میں 72 صحافیوں کو قتل کیا گیا جن میں سے 48 صحافی خالصتاً خبر دینے، معلومات دوسروں تک پہنچانے اور مسائل کی کوریج کے دوران قتل کیے گئے، جب کہ دیگر 24 صحافیوں کو بھی مختلف وجوہات کی بنیاد پر قتل کیا گیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں