جے کے پی پی سعودی عرب نے وزیراعظم آزادکشمیر کی برطرفی کیلئے آوازبلندکردی

اسلام آباد(سٹیٹ ویوز)راجہ فاروق حیدر کی ٹیلیفونک کال کے منظر عام پہ آنے سے ان کی اصلیت سامنے آ چکی ہے.ایک طرف کشمیری بھارتی مظالم کو دنیا کے سامنے بے نقاب کر رہے ہیں دوسری طرف ریاستی وزیراعظم کی خواتین بارے گفتگو نے عوام کو مایوس کیا ہے. آزاد کشمیر کی ستر سالہ تاریخ میں اس طرح کا بد حواس انسان اتنے بڑے عہدے پر نہیں آیا. وہ اس عہدے کے اہل نہیں ہیں۔ان خیالات کا آظہار جموں کشمیر پیپلز پارٹی سعودی عرب کے رہنماؤں وحید خاکسار،توفیق آفتاب،طارق سعید،ابرار خان،ایس ایم داوؤد خان، مرزا فضیل جرال، عاطف یسین،فیصل افسر ہمایوں کریم،مہتاب بخاری سجاد حسین، یاسر رشید اور دیگر نے کیا۔

انھوں نے کہا کہراجہ فاروق حیدر وزیراعظم کے عہدے کے لیے اہل نہیں ہیں ٹیلیفونک کال کے منظر عام پہ آنے سے ان کی اصلیت سامنے آ چکی ہے. عوام ان کو مزید برداشت نہیں کر سکتی. تحریک آزادی کشمیر پر منفی اثرات مرتب ہوئے ہیں ایک طرف کشمیری بھارتی مظالم کو دنیا کے سامنے بے نقاب کر رہے ہیں دوسری طرف ریاستی وزیراعظم کی خواتین بارے گفتگو نے عوام کو مایوس کیا ہے وزیراعظم کے خلاف حکومت کے اندر اور ن لیگ کے سیاسی کارکنوں کا سخت ردعمل اس بات کا ثبوت ہے کہ راجہ فاروق حیدر کا مزید اس عہدے پہ رہنا ریاست کے لیے نقصان دہ اور ریاستی عوام کے لیے باعث ندامت ہے۔

. جموں کشمیرپیپلزپارٹی سعودی عرب کے رہنماؤں نے وزیراعظم آزاد کشمیر کی ٹیلیفونک گفتگو بارے سخت ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ہمآڈیو لیکس میں وزیراعظم کی قابل اعتراض گفتگو خواتین کے متعلق نا زیبا الفاظ کی بھرپور مذمت کرتے ہیں ایسا شخص وزیراعظم کے عہدے پر رہنے کا حق نہیں رکھتا وہ فوری مستفی ہو جائیں۔ آزاد کشمیر کی ستر سالہ تاریخ میں اس طرح کا بد حواس انسان اتنے بڑے عہدے پر نہیں آیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں