بجٹ میں ریلیف نہ ملنے پر سرکاری ملازمین کا احتجاج کا فیصلہ

لاہور(سٹیٹ ویوز ) بجٹ میں مہنگائی کے تناسب سے تنخواہیں اور پنشن نہ بڑھنے کے پیش نظر سرکاری ملازمین نے دمادم مست قلندرکا فیصلہ کر لیا۔

ذرائع کے مطابق وفاقی حکومت کی جانب سے بجٹ میں سرکای ملازمین کی تنخواہوں اور پنشن میں 10فیصد اضافہ کیے جانے کی اطلاعات ہیں جس کو بنیادی تنخواہ میں اضافہ کی بجائے ایڈہاک ریلیف کے طور پردیا جائے گا۔مالی مشکلات کے سبب وفاقی حکومت اس ضمن میں کوئی اور ریلیف دینے کا ارادہ نہیں رکھتی۔

ذرائع کے مطابق مذکورہ اطلاعات کے پیش نظر دفتر لاٹ صاحب/سول سیکرٹریٹ کے 7ہزار سے زائد ملازمین کی نمائندہ تنظیم پنجاب سول سیکرٹریٹ ایمپلائز ایسویسی ایشن کے ذمہ داروں صدر راجہ سہیل احمد، جنرل سیکرٹری چودھری غلام غوث اور سیکرٹری اطلاعات عبد الکریم اعوان کے ایپکا پاکستان کے ایک سے زائد گروپس کے علاوہ ملازمین کی دیگر نمائندہ تنظیموں سے روابط تقریبا مکمل ہو چکے ہیں اور عید الفطر کے بعد اس ضمن میں معاملات کو حتمی شکل دیدی جائے گی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں