وزیراعظم عمران خان کا آزادکشمیرمیں سیاحت کے فروغ پرزور،متاثرین کنٹرول لائن کیلئے بھی خوشخبری

اسلام آباد(سٹیٹ ویوز)وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ آزاد جموں و کشمیر میں سیاحت کے بے انتہا مواقع موجود ہیں وہاں سیاحت کو فروغ دینے کی اشد ضرورت ہے۔بیرون ملک مقیم پاکستانی آزاد جموں و کشمیر کا سب سے بڑا اثاثہ ہیں ان کے مسائل کے حل پر خصوصی توجہ دی جائے۔

وزیراعظم عمران خان نے یہ بات آزاد جموں و کشمیر کے مختلف ترقیاتی منصوبوں ، سیاحت کے فروغ اور دیگر اہم معاملات پر اعلیٰ سطح کا اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہی ہے۔

اجلاس میں لائن آف کنٹرول کے متاثرین کی بحالی اور فلاح و بہبود کے حوالے سے وفاقی حکومت کے منصوبوں، ایل او سی متاثرین کو صحت انصاف کارڈ کی فراہمی پر بات کی گئی ۔

مانسہرہ مظفرآباد منگلا میرپور (فور ایم ) پراجیکٹ، نیلم جہلم اور کوہالہ پراجیکٹ، منگلا ڈیم توسیع منصوبے سے متعلقہ معاملات کے علاوہ آزاد جموں کشمیر میں سیاحت کے فروغ کے حوالے سےبھی گفتگو کی گئی ۔

وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ نیشنل ٹورازم کوارڈینیشن بورڈ کی مشاورت سے آزاد جموں و کشمیر میں سیاحت کے فروغ اور خصوصا سیاحت کے شعبے میں نجی شعبے کی حوصلہ افزائی و سرمایہ کاری کے لئے مفصل لائحہ عمل تشکیل دیا جائے۔

وزیر اعظم آزاد جموں و کشمیر راجا فاروق حیدر نے کشمیر کا مسئلہ پرزور طریقے سے عالمی سطح پر اٹھانے اور آزاد جموں وکشمیر اور گلگت بلتستان کے عوام کو درپیش مسائل کے حل میں وزیر اعظم عمران خان کی ذاتی دلچسپی اور کاوشوں پر ان کا شکریہ ادا کیا۔

راجہ فاروق حیدر نے کہا کہ بین الاقوامی سطح پر کشمیر کا مسئلہ اجاگر کرنے، بھارتی جارحیت کا مقابلہ کرنے ، آزاد کشمیر کی تعمیر و ترقی کے لئے مالی معاونت فراہم کرنے پر وفاقی حکومت کے تعاون کے مشکور ہیں۔

وزیراعظم آزاد کشمیر نے کہا کہ حکومت پاکستان کی جانب سے نئی ویزہ پالیسی آزاد کشمیر میں سیاحت کے فروغ میں معاون ثابت ہو رہی ہے۔

وزیر اعظم آزاد جموں و کشمیر کی جانب سے وزیرِ اعظم عمران خان کوآزاد کشمیر کا دورہ کرنے اورآزاد جموں وکشمیر قانون ساز اسمبلی سے خطاب کی دعوت بھی دی گئی ۔

مخدوم خسرو بختیار کی طرف سے دی گئی بریفنگ میں کہا گیا کہ ایل او سی سے متاثرہ افراد کی بحالی کے لئے تین ارب روپے کا پراجیکٹ بنایا گیا ہے۔

وزیرِ اعظم کو نیلم جہلم اور کوہالہ پراجیکٹ کے معاملات کا جائزہ لینے کے لئے قائم کردہ کمیٹی کی کارروائی اوراب تک کی پیش رفت پر تفصیلی بریفنگ بھی دی گئی ۔وزیراعظم نے منگلا ڈیم ریزنگ (توسیع) پراجیکٹ سے متعلق معاملات کے حل کے لئے کمیٹی تشکیل دینے کی منظوری بھی دی ۔

اجلاس میں وزیر برائے امور کشمیر و گلگت بلتستان علی امین گنڈا پور، وزیر منصوبہ بندی مخدوم خسرو بختیار، وزیرِ آبی وسائل فیصل واؤڈا، مشیر برائے ماحولیاتی تبدیلی ملک امین اسلم شریک ہوئے۔

وزیر اعظم آزاد جموں و کشمیر راجا فاروق حیدر، معاون خصوصی برائے سماجی تحفظ و تخفیفِ غربت ڈاکٹر ثانیہ نشتر، متعلقہ وفاقی سیکرٹریز ، چیف سیکرٹری آزاد جموں و کشمیر و دیگر سینئر افسران بھی اجلاس میں شریک تھے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں