میرپور کے بااثر فرد کے خلاف ایف آئی آر درج۔ اربوں روپوں کے اثاثوں کی چھان بین کی بھی بازگشت

میرپور(سٹاف رپورٹر) اسلام آباد میں مقیم میرپورسےتعلق رکھنے والے میجر(ر) فرقان سلیم اربوں روپوں کے اثاثوں کے مالک نکلے۔اثاثوں بارے چھان بین کا مطالبہ سوشل میڈیا پر وائرل ہو چکا ہے۔فرقان سلیم کا تعلق میرپور سے ہے اور وہ جنرل اشفاق پرویز کیانی کے ساتھ سٹاف آفیسر رہے۔انکے ایک بھائی آزادکشمیر میں ایس پی بھی ہیں جنکی مبینہ طورپر خلاف میرٹ پروموشن کے نتیجے میں تقریباً 12 افسروں کا حق مارا گیا جبکہ برطانیہ میں مقیم دوسرے بھائی مبینہ طورپرانٹرپول کو مطلوب ہیں۔

width="206"

فرقان سلیم کے بارے میں سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ایک پوسٹ میں لکھا گیا ہے کہ ایک دہائی سے جنرل(ر) اشفاق پرویز کیانی کا نام استعمال کرکے 46 سالہ ریٹائرڈ میجر نے اربوں روپوں کے اثاثے بنائے اور اب نیب اور ایف آئی اے کو دباؤ میں لاکر اپنے خلاف تحقیقات روکے ہوئے ہیں۔

 width=

بتایا جاتا ہے کہ فرقان سلیم کے خلاف متعدد ایف آئی آر بھی درج ہیں جن میں سے ایک ایف آئی آر تھانہ شالیمار میں 29 مئی 2019 کو درج ہوئی۔ایف آئی آر میں ن۔ف دختر س نے فرقان سلیم پر الزام عائد کیا ہے کہ انکی کمپنی میں ملازمت کے دوران انہوں نے نکاح کا جھانسہ دیکر میرے ساتھ ناجائز تعلقات استوار کئے۔ایک بچہ ضائع کرانے کے بعد اب دوسرا بچہ ضائع کرانےکی کوشش میں نے ناکام بنائی۔

درخواست میں خاتون نے پولیس سے قانونی کاروائی کرنے اور انصاف دلانے کی استدعا کی جبکہ پولیس تھانہ شالیمار نے اس ایف آئی آر کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ ملزم کو گرفتار کرنے کیلئے چھاپے مارے جارہے ہیں جبکہ اطلاعات کے مطابق ملزم بیرون ملک فرار ہے۔سٹیٹ ویوزنے فرقان سلیم کا موقف جاننے کیلئے ان سے رابطہ کرنے کی کوشش کی لیکن ان سے بات نہ ہوسکی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں