فریال تالپورامیر ترین ،شہلارضا ایک کروڑ کی مالک،اظہار الحسن مقروض نکلے

اسلام آباد (سٹیٹ ویوز) الیکشن کمیشن نے سندھ اسمبلی کے ممبران کے اثاثوں کی تفصیلات جاری کر دیں۔ وزیراعلی مراد علی شاہ کے اثاثوں کی مالیت 22 کروڑ 88 لاکھ روپے، اپوزیشن لیڈر فردوس شمیم نقوی 16 کروڑ 84 لاکھ سے زائد اثاثوں کے مالک، اسپیکر سندھ اسمبلی سراج درانی 6 کروڑ 40 لاکھ کے اثاثوں کے مالک نکلے ۔

فریال تالپور نے 38 کروڑ سے زائد مالیت کے اثاثے ظاہر کیے، گوشواروں کے مطابق فریال تالپور کا بیرون ملک کوئی اثاثہ نہیں۔الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری تفصیلات کے مطابق وزیراعلی مراد علی شاہ کے اثاثوں کی مالیت 22 کروڑ 88 لاکھ روپے،جس میں سے پراپرٹی کی مالیت 4 کروڑ 15 لاکھ روپے اورایک کروڑ 42 لاکھ روپے مالیت کی 2 گاڑیوں ہیں ۔

ان کے بینک میں 16 کروڑ 89 لاکھ روپے روپے سے زائد ہیں۔ مراد علی شاہ کی اہلیہ کے پاس ایک کلو سے زائد سونا بھی موجود ہے۔اپوزیشن لیڈر فردوس شمیم نقوی 16 کروڑ 84 لاکھ سے زائد اثاثوں کے مالک ہیں جبکہ وہ 12 کروڑ سے زائد کے مقروض بھی نکلے۔

سابق صدر آصف زرداری کی ہمشیرہ فریال تالپور نے 38 کروڑ سے زائد مالیت کے اثاثے ظاہر کئے ہیں۔ گوشواروں کے مطابق ان کا بیرون ملک کوئی اثاثہ نہیں ، فریال تالپور ایک کلو گرام سونے کی بھی مالک نکلیں ۔ فریال تالپور کی دونوں بیٹیاں بھی کروڑ پتی ہیں،

فاطمہ تالپور کے 3 کروڑ 31 لاکھ،عائشہ تالپور کے 14 کروڑ سے زائد کے اثاثے ہیں۔ فریال تالپور کی ہمشیرہ ڈاکٹر عذرا فضل 10 کروڑ سے زائد اثاثوں کی مالک ہیں۔سپیکر سندھ اسمبلی سراج درانی 6 کروڑ 40 لاکھ کے اثاثوں کے مالک ہیں ،وزیر بلدیات سعید غنی 2 کروڑ، سہیل انور سیال 7 کروڑ سے زائد کے مالک نکلے۔

تحریک انصاف کے حلیم عادل شیخ کے اثاثوں کی مالیت ایک کروڑ 93 لاکھ روپے،علی گوہر مہر 26 کروڑ،سابق وزیراعلی سندھ قائم علی شاہ 2 کروڑ سے زائد اثاثوں کے مالک اور شرجیل میمن 3 کلو سونے سمیت 37 کروڑ سے زائد اثاثوں کے مالک ہیں۔

کنور نوید جمیل کے 5 کروڑ 23 لاکھ، خرم شیر زمان کے 5 کروڑ 94 لاکھ کے اثاثے ،خاتون رکن ثروت فاطمہ کے پاس گھر نہ گاڑی، صرف ایک لاکھ 20 ہزار کے اثاثے ہیں۔ رہنما ایم کیو ایم خواجہ اظہار الحسن کے ایک کروڑ 17 لاکھ کے اثاثے،وہ 54 لاکھ کے مقروض بھی نکلے۔ سابق سپیکر سندھ اسمبلی شہلا رضا ایک کروڑ 89 لاکھ سے زائد اثاثوں کی مالک ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں