چالیس ہزار روپے والے پرائز بانڈز کی رجسٹریشن کا فیصلہ

اسلام آباد(نیوزڈیسک)بھاری سرمایہ کاری کیے جانے کے پر حکومت نے40 ہزار روپے والے پرائز بانڈز کو رجسٹر کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے ۔

اسٹیٹ بینک کے مطابق پاکستانیوں نے پرانے 40 ہزار روپے کے پرائز بانڈز میں 260 ارب روپے کی سرمایہ کاری کر رکھی ہے جس کی کل مالیت 940 ارب روپے ہے۔

شہری محتاط رہیں کیوں کہ اب 40 ہزار روپے کے بونڈ کی رجسٹریشن لازمی ہے ورنہ جرمانہ دینا پڑے گا ۔

دوسرے نمبر پر 25 ہزار روپے کے پرائز بانڈز آتے ہیں جن میں اب تک 160 ارب روپے اور 15 ہزار روپے کے پرائزبانڈز میں 173 ارب روپے کی سرمایہ کاری کی جاچکی ہے ۔اس کے علاوہ دیگرمالیت کے پرائزبانڈ پر بھی 348 ارب روپے کی سرمایہ کاری کی جا چکی ہے۔

یاد رہے کہ حکومت نے گزشتہ ہفتے اسٹیٹ بنک آف پاکستان نے 40 ہزار کے پرانے پرائز بانڈز کی خرید و فروخت بند کردی ہے۔

اسٹیٹ بنک کی جانب سے جاری کردہ حکم نامے کے تحت 40 ہزار روپے مالیت کے پرانے رجسٹرڈ پرائز بانڈ کی خرید و فروخت 24 جون سے بند ہوگئی ہے اور انہیں تبدیل کرانے کی آخری تاریخ 30 مارچ 2020 ہے۔ اس کیلئے آپ حبیب بینک ، یونائٹڈ بینک ، نیشنل بینک ، مسلم کمرشل بینک ، الائیڈ بینک اور بینک الفلاح کی مخصوص برانچوں سمیت اسٹیٹ بینک کی 16 برانچوں سے بھی تبدیل کرائے جاسکتے ہیں اسٹیٹ بینک کی دو برانچیں کراچی میں موجود ہیں جبکہ تیسرا آپشن یہ ہے کہ نیشنل سیونگ سینٹر کی 376 برانچوں سے بھی تبدیل کرسکتے ہیں ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں